پاکستان میں پولیو خاتمے کے قریب؟ رواں سال صرف ایک کیس سامنے آیا

دنیا کے بیشتر خطوں میں پولیو ماضی کا قصہ بن گیا ہے لیکن کچھ ممالک اب بھی ایسے ہیں جہاں یہ ایک تلخ حقیقت ہے۔ دنیا میں صرف 2 ممالک میں پولیو وائرس باقی ہے جس میں سے ایک پاکستان اور دوسرا اس کا پڑوسی ملک افغانستان ہے۔

پاکستان کی پولیو ویکسی نیشن کی کوششیں عسکریت پسندی اور غلط معلومات جیسے مختلف چیلنجز کا سامنا کر رہی ہے اور حکومت کی جانب سے حفاظتی کوششیں جاری ہیں لیکن اب پاکستان میں حالات پہلے سے بہت مختلف ہیں کیونکہ رواں سال پولیو کا اب تک صرف ایک کیس بلوچستان سے سامنے آیا ہے۔

یہ معلومات اےآر وائی سے منسلک نامور صحافی ماریہ میمن نے ٹوئٹر پر شیئر کیں جس میں انہوں نے کہا کہ 2021 میں پاکستان میں پولیو کیسز میں نمایاں کمی ہوئی ہے۔ انہوں نے پاکستانی عوام کو اس کے لیے شاباش بھی دی۔

پاکستان میں انسداد پولیو پروگرام کے حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان میں کورونا پابندیوں کی وجہ سے ملک میں رواں برس پولیو کیسز میں بھی نمایاں کمی آئی ہے۔

سرکاری اعداد و شمارکے مطابق رواں برس پولیو کا صرف ایک کیس سامنے آیا ہے جب کہ گزشتہ برس اسی عرصے کے دوران پولیو وائرس سے 50 بچے متاثر ہوئے تھے۔

البتہ حکام کا کہنا ہے کہ ملک سے پولیو کے خاتمے کی راہ میں سب سے بڑا چیلنج وہ 2 فیصد بچے ہیں جن کے والدین انہیں پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے سے مسلسل انکار کرتے آ رہے ہیں۔

ملک میں انسداد پولیو پروگرام کے سربراہ ڈاکٹر شہزاد کے مطابق پاکستان میں گزشتہ برس مئی کے آخر تک پولیو کے 50 کیس رپورٹ ہوئے تھے جب کہ رواں برس اب تک صرف ایک کیس رپورٹ ہوا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ برس لیے گئے ماحولیاتی نمونوں میں 62 فی صد مثبت کیس تھے جب کہ رواں برس مثبت کیسز کی شرح کم ہو کر 24 فی صد ہو گئی ہے۔ رواں برس یہ بھی ڈویلپمنٹ ہوئی ہے کہ پاکستان کے مختلف شہروں سے سیوریج سے جتنے بھی نمونے لیے گئے ان میں پولیو وائرس کی موجودگی نہیں پائی گئی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >