ڈپٹی کمشنر گجرات نے کرونا کی وبا سے نبٹنے کیلئے جارحانہ حکمت عملی اپنا لی

ڈپٹی کمشنر گجرات ڈاکٹر خرم شہزاد

ضلعی انتظامیہ گجرات نے کرونا کی وباء سے نبرد آزما ہونے کی خاطر درج ذیل پالیسی اختیار کی یے اور یہ پالیسی عالمی ادارہ صحت ( WHO ) کی رہنمائی کے عین مطابق ھے

ایک : ٹریک ٹریس ٹیسٹ

دو : ٹیسٹ ٹیسٹ ٹیسٹ

تین : اسکو دبانا ، اس کے سامنے ڈھال بننا ، اس کا علاج ، اس کی تخفیف

لیجئے اب ہم ضلع گجرات کی تازہ ترین صورت حال آپ کے سامنے رکھتے ہیں
94 پازیٹیو کیس
381 نیگیٹیو کیس

اور کم وبیش 144 کیسز کے ٹیسٹ کی رپورٹ کا انتظار ہے اس وقت ضلعی انتظامیہ گجرات کی پالیسی جارحانہ انداز میں پورے گجرات میں کرونا میں مبتلا افراد کو تلاش کر کے ان تک رسائی حاصل کرنا ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کے ٹیسٹ کئے جا سکیں

اور اس جارحانہ پالیسی کی بنیاد مندرجہ ذیل بین الاقوامی اقدامات پر رکھی گئی یے یاد رہے اب تک 616 ایسے افراد کا ٹیسٹ کیا جا چکا ھے جن کے بارے میں شبہ تھا کہ کہیں یہ کرونا وائرس میں مبتلا نہ ہوں

اور الحمدللہ یہ تعداد پوری ڈویژن میں سب سے زیادہ ھےاس وقت عزیز بھٹی شہید ہاسپٹل گجرات میں 91 مریض زیر علاج ہیں مختلف ھسپتالوں کے آئسولیشن وارڈز میں رکھے گئے مریضوں کی تعداد 120 ھے134 افراد قرنطینہ مراکز میں ھیںریکارڈ مدت میں قرنطینہ مراکز اور آئسولیشن سنٹرز کا قیامضلعی انتظامیہ نے ڈپٹی کمشنر گجرات ڈاکٹر خرم شہزاد کی قیادت میں ریکارڈ مدت میں درج ذیل قرنطینہ مراکز اور آئسولیشن سنٹرز قائم کر دئئے ھیں

ایک ۔ جامعہ گجرات میں قائم ایک ہزار افراد کی گنجائش کا حامل قرنطینہ سنٹر
دو ۔ سوشل سیکیورٹی ھاسپٹل گجرات میں 100 بستروں پہ مشتمل آئسولیشن سنٹر
تین ۔ شیلوخ چرچ مشن ھاسپٹل میں 100 بستروں پر مشتمل آئسولیشن سنٹر

الحمدللہ گجرات جمنازیم میں پانچ دن کی ریکارڈ مدت میں 200 بستر پر مشتمل فیلڈ ھاسپٹل قائم کیا گیا  200 بستروں پر مشتمل مزید دو ہسپتال عنقریب تکمیل کو پہنچیں گے اب تک میڈیا کی رپورٹس اور اپنے کنڑول رومز پہ موصول شکایات کی بدولت انتظامیہ نے بیرون ملک سے آنے والے 2025 افراد کی سکریننگ کا عمل مکمل کر لیا ھے جس میں مزید 450 افراد کا اضافہ ہو چکا یے

ضلعی انتظامیہ اپنے ڈاکٹرز، نرسز اور پیرا میڈکس کی خاطر خواہ دیکھ بھال میں تندھی سے لگی ھے کیونکہ وہ ھیرو کا درجہ رکھتے ہیں ضلع گجرات کے باشعور شہریوں کے لئے یہ اعداد و شمار خاصے حوصلہ افزاء ھیں

ایک ۔ اس وقت ضلع گجرات میں ڈاکٹرز کے لئے حفاظتی کٹس ، ماسک یا کسی بھی اور چیز کی قطعا کوئ کمی نہیں
دو ۔ حکومت پنجاب نے کرونا کی وبا کے دوران ڈاکٹرز اور میڈیکل سٹاف کو ایک ماہ کی زائد تنخواہ دینے کا فیصلہ کیا ھے
تین ۔ جو ڈاکٹرز براہ راست کرونا کے مریضوں کے علاج پہ مامور ھیں وہ ایک ہفتہ اپنے فرائض سر انجام دینے کے بعد دو ہفتے کی رخصت پر جا سکیں گے

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More