پیپلزپارٹی نے اپنی سیاست کیلئے مریم نواز کو کیسے استعمال کیا؟

یہ ایک حقیقت ہے کہ پیپلزپارٹی نے مریم نواز کو خوب استعمال کرکے بھرپور سیاسی فائدے اٹھائے ہیں۔

مریم نواز کے غصہ ، نفرت، جھوٹ ، حد سے زیادہ چالاکی اور خود اعتمادی، غلبہ، ویژن سے عاری، ضرورت سے زیادہ نمائش اور خودپسندی نے ن لیگ کو جہاں ناقابل تلافی نقصان پہنچایا، پانامہ کیس میں کیلبری فونٹ، قطری خط، جعلی ٹرسٹ ڈیڈ، میری لندن تو کیا پاکستان میں بھی کوئی پراپرٹی نہیں یہی باتیں نوازشریف کے گلے پڑی اور نوازشریف نااہل ہوکرنہ صرف وزارت اعظمیٰ سے ہاتھ دھوبیٹھے بلکہ انہیں بیٹی کے ساتھ جیل بھی جانا پڑگیا۔

صرف یہی نہیں بعد میں بھی مریم نواز کی وجہ سے ن لیگ کو نقصان پہنچتا رہا، جیسے اپنے والد کو مشورہ دینا کہ پاکستان مت آنا، ہر موقع محل پر غلط بیانی سے کام لینا، ایسے فیصلے کردینا جنہیں اپنا ہی خاندان تسلیم نہ کرے، فوج کے خلاف بیان بازی وغیرہ ۔ اس پر تو میں کچھ عرصہ قبل بات کرچکا ہوں لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ مریم نواز پیپلزپارٹی کے ہاتھوں استعمال ہوگئیں۔

پیپلزپارٹی نے مریم نواز کی بچگانہ سیاست کا بھرپور فائدہ اٹھایا اور اپنی سیاست کیلئے راہ ہموار کی۔ مریم نواز نے بلاول کو بھائی کہہ کر، مردان ریلی میں پیپلزپارٹی زندہ باد کے نعرے لگاکر، آصف زرداری کو اپنے والد کی طرح قرار دیکر، بے نظیر بھٹو اور ذوالفقار علی بھٹو کے مزار پر حاضری دیکر اور پھول چڑھاکر پیپلزپارٹی کو فائدہ دے چکی ہیں۔

وہ بے نظیر جن سے متعلق نوازشریف پر الزام ہے کہ انہوں نے اسکی نازیبا تصاویر ہیلی کاپٹر سے پھنکوائیں، جسے نوازشریف کرپٹ اور ملک کیلئے سیکیورٹی رسک کہتے رہے، وہ ذوالفقار بھٹو جس پر نوازشریف مشرقی پاکستان توڑنے کاالزام لگاتے رہے، اسکی پھانسی کو درست قرار دیتے رہے، اس بے نظیر بھٹو اور ذوالفقار علی بھٹو کے مزار پر حاضری دیکر مریم نواز نے یہ ثابت کردیا کہ انکے والد ان سے متعلق جو کہتے رہے وہ غلط تھا۔

پیپلزپارٹی نے بڑی چالاکی سے یہ کام کرکے بے نظیر اور ذوالفقار بھٹو پر ملک دشمنی، کرپشن سمیت تمام الزامات دھلوادئیے۔ نہ صرف بے نظیر، ذوالفقار بھٹو بلکہ آصف زرداری جسے ن لیگ مسٹر 10 پرسنٹ کہتی رہی، جس پر کرپشن کے کیسز بناتی رہی، اسی آصف زرداری کی کرپشن کے الزامات نہ صرف مریم نواز بلکہ پوری ن لیگ نے دھودئیے۔

مریم نواز نے نوازشریف کو اپنے والدکی جگہ قرار دیا، مریم نواز مستقبل میں اس شخص پر جسے وہ اپنے والد کی جگہ قرار دیتی ہیں، کرپشن کے الزامات کس منہ سے لگائیں گی؟ کیا پیپلزپارٹی مریم نواز کو ویڈیو کلپس اور بیانات دکھاکر یہ سوال نہیں کرے گی کہ آپ کے لوگ تو ٹاک شوز میں آصف زرداری اور پوری پیپلزپارٹی کادفاع کرتے ہیں، آپ (مریم نواز) آصف زرداری کو اپنےو الد کی جگہ اور بلاول زرداری کو چھوٹا بھائی قرار دیتی ہیں، جب آپ یہ کررہی تھیں تب آپکو یہ الزامات یاد نہیں آئے؟

مستقبل میں پیپلزپارٹی مریم نواز کی ویڈیوز اور بیانات دکھائے گی تو الٹا مریم نواز کا ہی مذاق اڑے گا اور پیپلزپارٹی سوشل میڈیا اور الیکٹرانک میڈیا پر یہ کلپ شئیر کرکے انجوائے کرے گی۔یہی پیپلزپارٹی مریم نواز کے بیان "پیپلزپارٹی زندہ باد” پر میمز اور ویڈیوز بناکر سیاسی فائدہ حاصل کرے گی۔

مریم نواز نے پیپلزپارٹی کو سب سے بڑا فائدہ سینٹ الیکشن کی صورت میں پہنچایا جب یوسف رضاگیلانی حفیظ شیخ کے مقابلے میں سینٹ کے امیدوار تھے اور ساری ن لیگ یوسف رضاگیلانی کو ووٹ ڈال رہی تھی۔ یوسف رضاگیلانی کو ووٹ ڈالنا ایک قسم کا تیر کے انتخابی نشان پر ووٹ ڈالنا ہے جبکہ ماضی میں ن لیگ الیکشن تیر کے انتخابی نشان کے خلاف ہی لڑتی رہی ہے۔

پیپلزپارٹی نے مریم نواز کو اس خوش فہمی میں مبتلا کیا کہ حفیظ شیخ کے ہارنے کا مطلب ہے عمران خان کی حکومت کا خاتمہ۔۔ یوسف رضاگیلانی کی جیت سے عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کامیاب بنانے میں آسانی ہوگئی اور مریم نواز نے باتوں میں آکر اپنے 80 سے زائد ووٹ پیپلزپارٹی کے حوالے کردئیے پھر الیکشن ہوگیا اور عمران خان نے اعتماد کی تحریک لاکر اپنی حکومت کو مستحکم کرلیا ۔

جس پیپلزپارٹی پر مریم نواز انحصار کررہی تھیں اسی پیپلزپارٹی نے ن لیگی خاتون سینٹ امیدوار فرزانہ کوثر کو جتوانے میں کوئی مدد نہ کی اور اپنا کام سیدھا کیا اور یوسف رضاگیلانی کو جتوادیا جبکہ سینٹ الیکشن میں مسلم لیگ ن کے ہاتھ کچھ نہ آیا۔ سوائے پنجاب کی 5 سیٹوں کے جو انہوں نے تحریک انصاف سے مفاہمت کرکے بلامقابلہ جیتی تھیں، کچھ ہاتھ نہ آیا، نہ باقی صوبوں سے اپنا امیدوار جتواسکی، چئیرمین سینٹ، ڈپٹی چئیرمین سینٹ تحریک انصاف اور اتحادی لے اڑے ۔

آخر میں سینٹ اپوزیشن لیڈر کی سیٹ یوسف رضاگیلانی چالاکی اور مکاری سے لے اڑے، وہ یوسف رضاگیلانی جسے جتوانے کیلئے مسلم لیگ ن نے سرتوڑ کوشش کی، جس کی کامیابی کیلئے مریم نواز نے یہ دعویٰ کردیا کہ سینٹ الیکشن میں ن لیگ کا ٹکٹ چلا ہے۔

پیپلزپارٹی نے ایک اور بڑا فائدہ مریم نواز کے فوج مخالف بیانات سے اٹھایا، پیپلزپارٹی نے اپنے آپکو اسٹیبلشمنٹ کے سامنے "اچھابچہ” ثابت کرکے جعلی اکاؤنٹس، منی لانڈگ اور کرپشن کیسز میں وقتی ریلیف لے لیا جبکہ مریم نواز آج بھی زہریلے بیانات دے رہی ہیں اور اپنی سیاست کو نقصان پہنچارہی ہیں۔

جب سے پی ڈی ایم بنی ہے ، مریم نوا زسیاست میں ایکٹیو ہوئی ہیں، ن لیگ نے کچھ بھی حاصل نہیں کیا، نہ کرپشن کیسز میں ریلیف، نہ سینٹ الیکشن میں ریلیف، نہ عمران خان حکومت گرسکی، مریم نوازکی سیاست کو فائدے کی بجائے الٹا نقصان ہی ہوا، اگرچہ پاکستانی میڈیا مریم نواز سے ہمدردی رکھتا ہے اور ن لیگ نے میڈیا کو مینیج کررکھا ہے ورنہ جس قسم کے مریم نواز نے بیانات دئیے ہیں، سیاست کی ہے، اگر اس قسم کی سیاست عمران خان نے کی ہوتی تو میڈیا ایسی کمپین چلاتا کہ خدا کی پناہ! عمران خان کے اپنے سپورٹرز اور پارٹی رہنما اس سے بیزاز ہوجاتے۔

لیکن عوام کو سب نظر آرہا ہے، مریم نواز کے بیانات کو عوام میں پذیرائی نہیں ملتی بلکہ الٹا مذاق اڑایا جاتا ہے جیسے مریم نواز کے بیان "آہاہاہا۔۔ پی ڈی ایم میں لڑائی ہوگئی” پر لوگ دلچسپ میمز بنارہے ہیں، پیپلزپارٹی زندہ باد ، بلاول میرے بھائی، آصف زرداری میرے والد کی طرح، میرے پاس ویڈیوز ہیں، اس سے عوام میں بہت برا تاثر گیا ہے۔

مریم نواز نے اب تک صرف بڑھک بازی کی ہے، بلندوبانگ دعوے کئے ہیں، اپنے خاندان کی تشہیر کی ہے لیکن آج تک مریم نواز یہ نہیں بتاسکیں کہ اسے حکومت ملے تو وہ عوام کیلئے کیا کریں گی؟ غربت، بیروزگاری، کرپشن، لوگوں میں احساس محرومی دور کرنے کیلئے کیا کریں گی؟ تعلیم، صحت کے شعبوں کو کیسے بہترکریں گی؟ پاکستانی معیشت کو کیسے ٹھیک کریں گے؟

آج یوسف رضاگیلانی سینٹ میں اپوزیشن لیڈر بنا ہے اور پوری ن لیگ لکیر پیٹ رہی ہے، ماتم کا ایک سلسلہ جاری ہے۔۔یوسف رضاگیلانی سینٹ میں ن لیگ کی جگہ اپوزیشن لیڈر کبھی نہ بنتا، اگر مسلم لیگ ن نے یوسف رضاگیلانی کو جتوانے میں اسکی مدد نہ کی ہوتی۔

  • Excellent narration…all that happened with the approval & blessings of Nawaz.
    And Nawaz had been selected by Gen Zia for his extraordinary "Low IQ” ……. same DNA is carrying by Maryam.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >