جرائم میں کمی کیلئے رشوت دینے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے:سی ٹی او لاہور

معاشرے میں بڑھتے جرائم کی وجہ پولیس نہیں، ہماری انا اور میڈیا کی غیر ذمہ دارانہ اور غیر جانبدارانہ رپورٹنگ ہے، سی ٹی او لاہور ملک لیاقت

تفصیلات کے مطابق سی ٹی او لاہور ملک لیاقت کا نجی ٹی وی کے اینکر سے بڑھتے جرائم کے حوالے سے گفتگو میں قرآن کی آیت کا ترجمہ کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہمارے معاشرے میں رشوت لینے والے کو تو ہم جہنم میں ڈال دیتے ہیں پر دینے والے کو کچھ نہیں کہتے۔جو کہ ہمارے لیے لمحہ فکریہ ہے۔

نجی ٹی وی کے رپورٹر سے گفتگو میں ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر ہمارے بچے کسی جرائم میں ملوث ہوتے ہیں اور پولیس کو ان کو گرفتار کر لے تو ہم لوگ اسکو اپنی انا کا مسئلہ بنا لیتے ہیں۔ اور تب تک آرام سے نہیں بیٹھتے جب تک جرم میں ملوث اپنے صاحب زادے کو گھر نہیں لے آتے چاہے اس کے لئے پولیس افسروں کے تبادلے ہی کیوں نہ کروانے پڑیں۔

نجی ٹی وی کے اینکر نے سی ٹی او سے استفسار کرتے ہوئے کہا کہ جرائم پر قابو پانا آپ پولیس والوں کا کام ہے کہ جواب میں ملک لیاقت کا کہنا تھا کہ پولیس کے علاوہ شہریوں کو بھی اپنی ذمہ داری کا احساس کرتے ہوئے جرائم پر قابو پانے کے لیے اقدامات کرنے چاہئیں۔

مزید کہ ملک لیاقت نے میڈیا کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے الزام لگایا کہ میڈیا کی جانب سے کی جانے والی غیر جانبدارانہ رپورٹنگ بھی بڑھتے ہوئے مسائل اور جرائم کی ایک وجہ ہے۔

  • Bribes are asked for, I was asked for Rs 600,000 by a Public Prosecutor for MDA Multan to settle a bogus case against my 70 year old Mother. I refused and they lodged an FIR against me when I have nothing to do with the case.

  • عوام کے پاس کھانے کو پیسہ نہیں ۔ وہ پاگل ہیں کہ زبردستی رشوت دیتے پھریں ؟ رشوت ہمیشہ بلیک میل کر کے اور مجبور شخص کو دھمکا کر لی جاتی ہے ۔ رشوت لینے اور دینے والے کو جہنمی کہا گیا ہے لیکن مجبوری میں رشوت دینے والے کی مجبوری اللہ بہتر جانتا ہے ۔


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >