آسیہ بی بی نے فرانس میں شہریت کیلئے درخواست دے دی

آسیہ بی بی بے فرانس میں پناہ کیلئے اپیل کردی

پاکستان میں توہین رسالت کے الزام میں کئی سال تک قید میں رہنے والی کرسچن خاتون آسیہ بی بی نے فرانس کی حکومت سے سیاسی پناہ کیلئے درخواست کردی ایک انٹرویو کے دوران آسیہ بی بی کا کہنا تھا کہ میری سب سے بڑی خواہش ہے کہ میں فرانس  میں رہائش پزیر ہوجاؤں ۔منگل کے روز پیرس کی جانب سے آسیہ بی بی کو اعزازی شہریت دی جائے گی، ان کو اعزازی شہریت دینے کا اعلان 2014 میں کیا گیا جب وہ جیل میں تھیں۔

آسیہ بی بی 2018 میں کینیڈا منتقل ہوگئی تھی،اس کے بعد پہلی بارانہوں نے فرانس کا دورہ کیا جہاں انہوں نے ان خیالات کا اظہار کیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ فرانس وہ ملک ہے جس کی وجہ سے مجھے نئی زندگی ملی، انہوں نے اپنی رہائی میں کردار ادا کرنے والی فرانسیسی صحافی اینی ایزا بیل کو فرشتہ قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ میری فرانسیسی صدر سے کوئی ملاقات طے نہیں ہے لیکن میں چاہتی ہوں کہ میری صدر سے ملاقات کروائی جائے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق آسیہ بی بی اپنی کتاب جو انہوں نے فرانسیسی صحافی کے ساتھ مل کر لکھی "فائنلی فری”  فرنچ زبان میں شائع ہونے کے بعد فرانس کا دورہ کررہی ہیں، ان کی کتاب انگریزی زبان میں ستمبر تک شائع ہونے کا امکان ہے۔ کتاب میں آسیہ بی بی نے خود پر بیتے مشکل حالات کو بیان کیا ہے اور قید میں گزارے لمحات کو قلم بند کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اینی ایزا بیل کے ساتھ مل کر جدوجہد کرنا چاہتی ہیں تاکہ پاکستان میں توہین مذہب کے نام پر گرفتار افراد کو رہائی دلاسکیں۔ آسیہ بی بی نے کہا کہ میں پاکستانی ہوں اور مجھے پاکستان سے محبت ہے لیکن میں ہمیشہ کیلئے جلاوطن ہوچکی ہوں۔ واضح رہے کہ انہیں 2009 میں توہین رسالت کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور پھر عالمی دباؤ پر 2018 میں انہیں رہا کردیا گیا جس کے بعد وہ کینیڈا منتقل ہوگئیں، جس پر پاکستان میں شدید احتجاج کیا گیا۔


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

>