پولیس کا پی آئی اے کے دفتر پر چھاپہ،دفتر سیل کر دیا

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے خطرات کو روکنے کے لیے حکومت کی جانب سے پورے ملک میں دفعہ 144 نافذ کی گئی ہے۔ تاہم پی آئی اے نے حکومت کی جانب سے جاری کیے گئے احکامات اور دفعہ 144 کو بالائے طاق رکھتے ہوئے پی آئی اے  لاہور کے بکنگ آفس میں کھلم کھلا خلاف ورزی کی گئی۔

پی ائی اے نے کل باہر رہنے والے پاکستانیوں کے لئے اسپیشل فلائٹس کا اعلان کیا.بد انتظامی کا یہ حال ہے، کے ساروں کو ٹکٹ خریدوانے کے لئے اپنے آفس بلا لیا. وہاں پر ان حالات میں سیکڑوں لوگوں اکٹھے ہو گئے.نہلے پے دہلا دیکھئے، وہاں بیٹھے ایجنٹس نے ٹکٹیں بلیک میں بیچنا شروع کر دیںکینیڈا کی ایمبیسی کو جب یہ سب پتہ چلا، انھوں نے فلحال فلائٹس کینسل کر دیں

Posted by Adeel Habib on Thursday, March 26, 2020

دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر پی آئی اے لاہور کے بکنگ آفس پر پولیس کی جانب سے چھاپہ مارا گیا جہاں پی آئی اے کے عملے کے 40 ارکان کے ساتھ ساتھ وہاں پر 100 سے زائد لوگ بھی موجود تھے جن کو پولیس کی جانب سے باہر نکال کر پی آئی اے کا دفتر سیل کردیا گیا۔ پولیس کی جانب سے دفتر سیل کیے جانے کے بعد ٹکٹ کے حصول کے لیے آئے لوگ دفتر کے باہر جمع ہوگئے اور موقف اپنایا کہ جب تک ہمیں ٹکٹ نہیں مل جاتے ہم یہاں سے نہیں جائیں گے۔لوگوں نے  پی آئی اے کے رویے کے خلاف احتجاج بھی کیا۔

یاد رہے کہ پی آئی اے کی جانب سے گزشتہ روز برطانیہ اور کینیڈا کیلئے فلائٹ آپریشن شروع کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔ پی آئی اے کی جانب سے اعلان کے بعد برطانیہ اور کینیڈا کا سفر کرنے کے خواہشمند حضرات ٹکٹ کے حصول کے لیے پی آئی اے لاہور کے دفتر میں موجود تھے ۔ تاہم ملک میں نافذ دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر پولیس نے چھاپہ مارکر دفتر کو سیل کر دیا۔ اس سے پہلے پی آئی اے کی جانب سے ٹکٹوں کی بد انتظامی اور بندر بانٹ پر مسافروں نے شدید احتجاج کیا اسی معاملے پر کیںیڈا کے سفارتخانے نے پی آئی اے کی فلائٹ کینسل کر دی۔

  • مشکل وقت میں مسلمان گھبرایا نہیں کرتا ……قائد آعظم
    سب چیزوں کی قیمت دگنی تگنی کر دیتا ہے….اور اگلے مشکل
    وقت کی دعا کرتا ہے.


  • 24 گھنٹوں کے دوران 🔥

    View More

    From Our Blogs in last 24 hours 🔥

    View More

    This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept

    >