پی او ایف واہ میں بڑے پیمانے پر فیس ماسک اور ہینڈ سینیٹائرز بننا شروع

کرونا کے خلاف اقدامات، دفاعی پیداوار کے ادارے بھی میدان میں آگئے

پاکستان آرڈیننس فیکٹری نے روزانہ کی بنیاد پر ماسک اور سینیٹائیزر بنانے کی صلاحیت حاصل کر لی۔

تفصیلات کے مطابق کرونا کے خلاف جنگ میں جہاں ایک طرف سول ادارے اور افواج پاکستان میدان میں ہیں اس صورت حال میں دفاعی پیداوار کے ادارے بھی میدان میں آگئے ہیں۔

پاکستان کی مایہ ناز اسلحہ ساز فیکٹری پاکستان آرڈیننس فیکٹری نے ہنگامی حالات میں روزانہ کی بنیاد پر 25 ہزار فیس ماسک اور 10 ہزار لیٹر سینیٹائیزر بنانے کی صلاحیت حاصل کر لی ہے۔

وزارت دفاعی پیداوار کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلیز کے مطابق ماسک بنانے کے لئے اسپیشل کپڑا استعمال کیا جا رہا ہے۔

پاکستان آرڈیننس فیکٹریز میں ایک فیکٹری CLOTHING FACTORY کے نام سے قائم ہے جو افواج پاکستان کے لیے  یونیفارم اور دیگر کپڑے کا سامنا بنانے کے لیے مخصوص ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان میں یہ وبا پھوٹنے کے بعد نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے ملک گیر سطح پر تمام کاروباری حضرات اور فیکٹریز سے درخواست کی تھی کہ جو بھی ماسک اور سینیٹائیزر بنائے گا اتھارٹی ہر طرح سے اسکی مدد کرے گی۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More