جعلی ایمبولینس نقلی مریض، ایمبولیس میں گٹکاسپلائی کرنیوالا گینگ گرفتار

جعلی مریض، نقلی ایمبولینس۔۔۔ کراچی میں ایمبولینس میں گٹکا سپلائی کرنے والا گینگ گرفتار۔۔۔ پولیس نے ڈرائیور اور جعلی مریض گرفتار کر لیا ، تھانے منتقل

تفصیلات کے مطابق کراچی میں اب گٹکے کی سپلائی کے لئے اب ایمبولینس استعما ل کرنے لگے، پولیس نے کشتی چوک کے قریب ایک ایمبولینس کو روک کر چیکنگ کی تو مریض کے اسٹریچر کے نیچے سے لاکھوں روپے مالیت کا مضر صحت گٹکا برآمد ہوا۔

ذرائع کے مطابق گٹکا یا اس کی مصنوعات مسافر بسوں کے خفیہ خانوں یا مختلف قسم کے سامان میں چھپا کر کراچی اسمگل کیا جاتا ہے، کبھی سبزی کی گاڑیوں اور کبھی فروٹ کی پیٹیوں میں چھپا کر اسمگل کیا جاتا ہے۔ ریتی بجری کے لوڈرز اور پانی سپلائی کے ٹینکرز میں بھی خفیہ خانے بنا کر گٹکے کی اسمگلنگ کی جاتی ہے۔

اب اس دھندے کو فروغ دینے کے لیے ایمبولینسز اور جعلی مریضوں کا استعمال شروع کر دیا گیا ہے۔ کراچی پولیس نے چوبیس گھنٹے کے دوران دو کاروائیوں میں گٹکے کی اسمگلنگ میں ملوث دو ایمبولینسز پکڑ لی ہیں۔پہلی کارروائی میں نیپئیر پولیس نے اس دھندے میں انتہا تک جانے والے ایک گروہ کو رنگے ہاتھوں پکڑلیا ہے۔

پولیس ذرائع کے مطابق گٹکا ایمبولینس میں رکھی ہوئی بوریوں میں بھرا ہوا تھا اور اسے ملزمان نے شہر کے مختلف علاقوں میں سپلائی کرنا تھا۔

پولیس نے ایمبولینس میں موجود تمام افراد کو گرفتار کر کر کے گٹکا تحویل میں لے لیا، ملزمان کے مطابق وہ چوکی سے مال لوڈ کر کے کراچی کے مختلف حصوں میں سپلائی کرتے تھے۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More