لاک ڈاؤن: پولیس کے روئیے کی وجہ سے نومولود زندگی کی بازی ہارگیا

کوروناوائرس کےپیش ِنظرلاک ڈاؤن کےدوران ڈبل سواری پرپابندی کی وجہ سےتین گھنٹےکانومولود اپنی جان کی بازی ہارگیا۔

محلہ محمد نگر کا رہائشی ساغر علی تین گھنٹے کے نومولود بچے کی طبیعت خراب ہونے پر بھائی کیساتھ ہسپتال روانہ ہوا جسے اوررہیڈ برج کے قریب پولیس اہلکاروں نے ڈبل سواری پر روک لیا۔

ساغر علی نے پولیس اپنی مجبوری سے آگاہ کیا لیکن پولیس اہلکاروں نے کہا کہ ہم خود ڈاکٹر ہیں اور انہیں زبردستی پولیس وین میں ڈال کرپورے شہر کا چکر لگوا یا اور تھانے لے جا کر نومولود بچے سمیت حوالات میں بند کر دیا۔

ساغر نے پولیس والوں کی منتیں ترلے کیں مگر سنگدل پولیس ملازمین مذاق اڑاتے رہے۔

جس کے بعد ساغر علی نے اپنے گھر فون کر کے اپنی بیوی اور دوسرے بھائی کو بلایا اور وہ بچے کو ہسپتال لے کر پہنچے تو ڈاکٹر نے بتایا کہ بر وقت آکسیجن نہ ملنے سے بچہ زندگی کی بازی ہارچکا تھا ۔

جس پر گھر میں گہرام مچ گیا اور مشتعل لوگوں نے تھانے کا گھیراؤ کرلیا ۔ بعدازاں پولیس نے ساغر علی کو شخصی ضمانت پر چھوڑدیا۔

  • وہ بٹھو کا گڑھ تھا وہاں جہالت لکھنا لازمی تھا یہ پاک لوگوں کا وزیر آباد ہے یہاں کوئی غیر شائستگی نہیں چلے گی.
    دوغلی صحافت اسٹیبلشمنٹ کے ٹٹو


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >