کراچی:انتظامیہ کا ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن،مارکیٹس سیل

تفصیلات کے مطابق کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے خطرے کے پیش نظر نافذ کئے گئے لاک ڈاون میں سندھ حکومت نے نرمی کرتے ہوئے تاجروں کو حکومتی ایس او پیز پر عمل درآمد کی یقین دہانی کے بعد کاروبار کرنے کی اجازت دی، تاہم حکومتی ایس او پیز کے برعکس کراچی کی مختلف مارکیٹوں میں دکانداروں اور تاجروں کی جانب سے حکومتی احکامات کی دھجیاں اڑائی جارہی ہیں۔

ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر کراچی کے صدر کے علاقے کی زینب مارکیٹ میں اسسٹنٹ کمشنر آصف رضا چانڈیو کی جانب سے کارروائی کرتے ہوئے زینب مارکیٹ کو سیل کردیا گیا۔

اسسٹنٹ کمشنر صدر نے مارکیٹ کو سیل کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ زینب مارکیٹ کے دکانداروں کی جانب سے ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرتے ہوئے ماسک اور دستانے نہیں پہنے گئے تھے۔ جس پر ہمیں مجبوراً قانون کو مقدم رکھتے ہوئے مارکیٹ کو سیل کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ دکانداروں کی جانب سے سماجی دوری کے اصولوں کی بھی خلاف ورزی جاری تھی۔

تاجروں کے احتجاج کے بعد بازار سیل کرنے میں دشواری کا سامنا کرنےپر پولیس کی نفری طلب کی گئی، جس پولیس پر بھی ضلعی انتظامیہ کی مدد کے لئے پہنچ گئی۔

دوسری جانب  ایس او پیز کی خلاف ورزی کرنے پر گل پلازہ بھی سیل کر دیا گیا ہے۔اسسٹنٹ کمشنر اسماء بتول کا ارم شاپنگ سینٹر کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے کہنا تھا کہ شاپنگ سنٹر میں موجود دکان داروں اور گاہکوں کی جانب سے حکومتی ایس او پیز کی کھلم کھلا خلاف ورزی جاری تھی۔ جس پر گل پلازہ اور ارم شاپنگ سنٹر کو سیل کیا جارہا ہے۔

دوسری جانب کمشنر کراچی افتخار شلوانی نے پیر کے روز اپنے دفتر سے ایک بیان جاری کیا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ دوکانوں کو دوبارہ کھولنے کی اجازت ایس او پیز کی تعمیل سے منسلک ہے۔کسی بھی دکاندار یا گاہک کو بغیر ماسک کے مارکیٹ میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More