پی کے 8303 کے تباہ ہونے پر فخر عالم نے سوالات اٹھا دیئے

 

پاکستان کے معروف اداکار فخر عالم نے پی آئی اے کی پرواز کے تباہ ہونے پر کئی سوال اٹھا دیئے۔فخر عالم نے تجرباتی طور پر ایئر بس320 کے کاک پٹ میں پائلٹ کے ساتھ بیٹھ کر سفر کیا اور اس پرواز کو ان حالات میں اڑایا جن حالات میں پی کے 8303 تباہ ہوئی تھی۔

پی آئی اے کی پرواز پی کے8303 کے تباہ ہونے کے بعد مختلف موقف سامنے آئے جس میں سول ایوی ایشن اتھارٹی نے کنٹرول ٹاور سے پائلٹ کی گفتگو کی ریکارڈنگ پبلک کر کے سارا ملبہ پائلٹ پر ڈال دیا اور دوسرا موقف یہ ہے کہ جہاز کی لینڈنگ کے وقت اس کے پہیے نہیں کھلے تھے جو کہ جہاز کی تباہی کا صریحاً غلط اور گمراہ کن جواز ہے۔

I ran several scenarios with the help of 2 seasoned pilots…..I am neither a safety expert, nor an investigator or a…

Posted by Fakhr-e-Alam on Wednesday, May 27, 2020

فخر عالم نے تجربہ کار پائلٹس کی مدد سے جہاز کو مقررہ حد سے زیادہ رفتار سے اڑا کر لینڈنگ کی کوشش کی تو جہاز لینڈ نہ ہوا اور اس کی سکرین پر وارننگ دکھائی گئی اور ساتھ میں ایک مخصوص قسم کی آواز بھی سنائی دی گئی۔ جو آواز اس ریکارڈنگ کے اندر بھی موجود تھی جو پرواز کے تباہ ہونے کے بعد منظر عام پر آئی تھی۔

فخر عالم نے کہا کہ جہاز میں سفر کرنا محفوظ اور آرام دہ ہونا چاہیے مگر پاکستانی ایئر لائن میں سفر کرنا خطرے سے خالی نہیں اور اس کی وجہ یہ ہے کہ قومی ایئر لائن میں کئی پائلٹ جعلی لائسنس اور مطلوبہ اہلیت کے بغیر ہی جہاز اڑارہے ہیں اور لوگوں کی جانوں سے کھیل رہے ہیں،

کچھ عرصہ قبل بھی پائلٹوں کی تنظیم پالپا کے ارکان کے خلاف انکوائری سامنے آئی جس میں متعدد پائلٹس کی لائسنس جعلی اور مطلوبہ اہلیت پر پورا نہ اترنے پر سوالات اٹھائے گئے تھے مگر اس انکوائری کا نتیجہ کیا نکلا سول ایوی ایشن اتھارٹی نے آج تک اس کو عوام کے سامنے لانے کی جرات نہیں کی۔

فخر عالم نے کہا کہ یہ ویڈیو بناتے ہوئے ان کو کئی پائلٹ اور پی آئی اے کے عہدیداروں نے فون کیے اور دھمکیاں دیں اور ان کو اپنے کام سے کام رکھنے کا کہا اور کہا کہ جاؤ ٹی وی پر جا کر ناچ گانا کرو مگر فخر عالم کا کہنا ہے کہ وہ دنیا کے جس بھی ملک میں رہیں وہ ایک ذمہ دار پاکستانی ہیں اور اس تحقیق پر فی الحال قیاس آرائی ہی سہی مگر کچھ نہ کچھ نتیجہ ضرور اخذ کیا جا سکتا ہے۔

فخر عالم نے کہا کے پچھلے10 سال میں 4 بڑے فضائی حادثے رونما ہوچکے ہیں جو کہ تشویشناک ہے،انہوں نے کہا کہ ہمیں یہ کوشش کرنی ہے کہ آئندہ کسی کو اپنے پیارے کی لاش کی شناخت اس کے ڈی این اے سے نہ کرنی پڑے فخر عالم نے کہا کہ مکمل سرکاری تحقیقات کی رپورٹ سامنے آنے تک وہ اپنی ویڈیو سے کچھ حصہ ابھی روک رہے ہیں مگر تحقیقات مکمل ہونے کے بعد وہ اس کو پبلک کر دیں گے۔

    Minister (4k + posts)

    Pakistan maen long route travel ek azab hae…. Bus maen safar karo to CHARSI drivers ke rehm o karam par aur es TATTI Khane airline PIA maen metric pas pilots ke aasray…..

    Khudkushi karni ho to PIA mae safar karo….

    Senator (1k + posts)

    There are many SOP’s which were NOT followed by the Pilot. He was too high and too fast when coming in for the landing.

    There is no denying that. The Pilot is definitely responsible for not following the SOP’s and making many mistakes.if its a clear day and you see sun and then you are quite sure its day time not a night. The plane made a belly landing in first attempt and that was confirmed by one of the a few survivors. The marks of engine scraping the ground are also discovered. Landing gear failure warning is also present in atc released audio. Now the question is whether pilot was aware or not that he is making a belly landing. If he was aware of it, Atc would have been informed, ground would have been prepared, but we didn’t see or hear about that and no emergency vehicles were called out, so that’s how now people with common sense speculate, but that’s not the verdict. Off course a full inquiry will be or should be carried out but you don’t see that happens much in pakistan. These days planes are very sophisticated and if one system fails there is always a alternative in most cases and pilots are trained for it, and if mechanical problems occurs and in this case it’s probably a landing gear failure and if pilot could land using a alternative method which if hes trained and fails to do so, it will be counted as pilot error not mechanical failure.

    Senator (1k + posts)

    وہ پیشے کے لحاظ سے ایک وکیل تھا، ایک دن گھر آیا تو سب کو حیران کر دیا کہ مجھے پی آئی اے میں  پائلٹ کی نوکری مل گئی ہے تھوڑی ٹریننگ کے بعد وہ جہاز اڑائے گا، باپ نے بہت کہا کہ بیٹا تمہارا یہ کیریئر نہیں ہے مت کرو، اس نے کہا نہیں میری بات ہو گئی ہے، سب ٹھیک رہے گا۔ پھر تاریخ گواہ ہے اس نے ٹھیک ٹھاک طیاروں کو 25 سال تک 8 لاکھ روپے تنخواہ پر چلایا، لیکن قسمت خراب کہ اس دفعہ اس کے جہاز میں فالٹ آ گیا۔ کیوںکہ وہ نہ تو کوئی انجنیئر تھا نہ ہی پیشہ ور پائلٹ۔   اور نہ ہی ایمرجنسی حالات کو نبٹنے کی کوئی ٹریننگ تھی ۔آخر کار اپنے سمیت 98 لوگوں کو شہادت کا خودساختہ رتبہ دلایا۔ اور شہید کہلایا

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More