کمرہ عدالت لوگوں سے بھرا دیکھ کر چیف جسٹس نے برہمی کا اظہار کیوں کیا؟

سماجی فاصلہ کیوں نہیں رکھا جارہا؟ چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد کل لوگوں سے بھرا ہوا کمرہ عدالت دیکھ کر برہم ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے فاضل بینچ نے مارگلہ ہلز تعمیرات کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت کمرہ عدالت صحافیوں، وکلا اور عام لوگوں سے بھر گیا۔

کمرہ عدالت کی حالت یہ تھی کہ لوگ ایک دوسرے کے ساتھ جُڑے ہوئے تھے، کسی قسم کے سماجی فاصلے کا خیال نہیں رکھا جارہا تھا۔ بعض لوگوں نے تو ماسک تک نہیں پہن رکھے تھے۔۔کمرہ عدالت میں ایسے لوگ بھی موجود تھے جن کا اس کیس سے کوئی تعلق نہیں تھا۔

چیف جسٹس نے یہ صورتحال دیکھ کر شدید برہمی کا اظہار کیا ۔ انہوں نے ریمارکس دیئے کہ سماجی فاصلہ کیوں نہیں رکھا جا رہا، ایک نشست چھوڑ کر بیٹھیں، وکلاء اور صحافی بھی سماجی فاصلہ رکھیں،

چیف جسٹس نے غیر متعلقہ لوگوں کو جانے کا کہتے ہوئے کہا کہ جن کا کیس ہے صرف وہی لوگ کمرہ عدالت میں رکیں۔ ہم نہیں چاہتے کہ عدالت میں ایسا کچھ ہو۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More