کراچی:کھارادر میں تین کمسن بچوں کی پراسرار ہلاکت

تفصیلات کے مطابق شہر قائد کے علاقے کھارادر میں 3 کم سن بہن بھائی پراسرارطورپرجاں بحق ہو گئے ہیں، جن میں دو کمسن بہنوں کے ساتھ ایک کمسن بھائی بھی شامل تھا، تینوں کمسن بچوں کی پر اسرار ہلاکت کے بعد پولیس نے تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

کھارادار کے ایس ایچ او ایس ذوالفقار کا اس حوالے سے بتانا تھا کہ تینوں ہلاک ہونے والے بچوں کا والد شہر سے باہر ہے، ہلاک ہونے والے کمسن بچوں میں گیارہ سال کی عائزہ اس کا چھوٹا بھائی آٹھ سالہ سعد اور چھوٹی بہن دو سال صفا شامل ہیں، جن کی اب تک موت کی وجہ زہرخورانی بتائی جا رہی ہے۔

پراسرار طور پر ہلاک ہونے والے تینوں کمسن بچوں کے اہل خانہ نے پولیس کو دیے گئے اپنے ابتدائی بیان میں بتایا کہ وہ بازار سے کھانے پینے کی کچھ اشیاء خرید کر لائے تھے اور کچھ کھانا گھر پر بھی موجود تھا جسے کھانے کے بعد تینوں بچوں کی حالت غیر ہوگئی تھی، جنہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں پر ڈاکٹر نے تینوں بچوں کی موت کی تصدیق کردی۔

کھارادر کے ایس ایچ او کا خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ تینوں کمسن بچوں کے اہل خانہ ہمارے ساتھ بالکل بھی تعاون نہیں کر رہے، بچوں کے اہل خانہ کی جانب سے مسلسل کارروائی نہ کرنے کا اصرار کیا جا رہا ہے جب کہ ہم ان سے کہہ رہے ہیں کہ کم از کم بچوں کی موت کا تعین تو ہونا چاہیے، جو کھانا بچوں نے کھایا تھا وہ ہمارے حوالے کیا جائے تاکہ اس کو لیبارٹری میں بھجوا کر اس کا ٹیسٹ کروایا جائے۔

دوسری جانب پولیس کا یہ بھی کہنا تھا کہ بچوں کا والد جو شہر سے باہر ہے اس کا انتظار کر رہے ہیں کہ وہ آئے  تو اس کو اس بات پر قائل کریں گے بچوں کا پوسٹ مارٹم کروایا جائے تاکہ ان کی ہلاکت کی اصل وجہ معلوم کی جا سکے۔

مزید برآں پولیس کا اپنی ابتدائی تفتیش میں کہنا تھا کہ بظاہر ایسا محسوس ہوتا ہے کہ گھر میں مچھر مار جراثیم کش اسپرے کا استعمال کیا گیا ہے، جو ممکنہ طور پر گھر میں پڑے ہوئے کھانے میں بھی شامل ہوگیا جسے کھانے کے بعد بچوں کی حالت غیر ہوگئی اور وہ موت کے منہ میں چلے گئے، تاہم پولیس کی جانب سے اس واقعے کے حوالے سے مزید تحقیقات کی جا رہی ہے اور تحقیقات مکمل ہونے کے بعد بچوں کے پر سرار ہلاکت کا معمہ حل ہو سکے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >