پی ٹی آئی حکومت کے پہلے سال میں کرپشن میں بڑی کمی،آڈیٹر جنرل رپورٹ

تحریک انصاف حکومت کے پہلے سال میں کرپشن گزشتہ برس سے 98 فیصد کمی،آڈیٹر جنرل رپورٹ

آڈیٹر جنرل پاکستان نے تحریک انصاف حکومت کے پہلے سال  2018-2019 کی رپورٹ جاری کردی، رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عمران خان حکومت کے پہلے سال میں کرپشن اور مالی بے ضابطگیوں میں گزشتہ برس کی نسبت 98 فیصد کمی ہوئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق تحریک انصاف حکومت کے پہلے ایک سال میں 270 ارب کی بے ضابطگی ریکارڈ کی گئی جبکہ اس سے پچھلے سال 2017-18 میں مسلم لیگ ن کی حکومت میں یہ کرپشن 15 کھرب سے بھی تجاوز کرگئی تھی۔

کرپشن اور مالی بے ضابطگیوں میں اس قدر کمی بے شک حکومت کی ایک بڑی کامیابی ہے، کرپشن کے خلاف جنگ کو اپنا انتخابی نعرہ بنانے والی تحریک انصاف کی حکومت کے پہلے سال میں کرپشن میں ہونے والی کمی سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ حکومت کرپشن مخالف قوائد و ضوابط کو نہ صرف سخت کررہی ہے بلکہ عمران خان کی سربراہی میں کرپٹ عناصر پر باقاعدہ طور پر نظر بھی رکھی جارہی ہے۔

مگر اس عرصے میں پھر بھی 270 ارب کی کرپشن ہوئی ہے یہ عوام کے ٹیکسوں سے حاصل ہونے والی ایک خطیر رقم ہے حکومت کو اس پیسے کو بھی ملک دشمن عناصر کی جیبوں میں جانے سے روکنے کیلئے اقدامات کرنا ہوں گے۔

تحریک انصاف حکومت کے پہلے سال میں کرپشن گزشتہ برس سے 98 فیصد کمی،آڈیٹر جنرل رپورٹ

آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی جانب سے گزشتہ 4 سالوں میں ریکارڈ کی گئی کرپشن کا احوال نیچے بیان کیا گیا ہے:
2015-16 مسلم لیگ ن کی حکومت کے دوران 3ہزار 200 ارب
2016-17 مسلم لیگ ن کی حکومت کے دوران 5ہزار800 ارب
2017-18 مسلم لیگ ن کی حکومت کے دوران 15اعشاریہ 7 کھرب
2018-19 تحریک انصاف کی حکومت کے دوران 270 ارب

واضح ہو کہ آڈیٹر جنرل آف پاکستان ملک کا وہ ادارہ ہے جو مختلف وزارتوں اور حکومتی امور میں مالی بے ضابطگیوں پر نظر رکھتا ہے اور ان کا سالانہ آڈٹ کرتا ہے۔

    Chief Minister (7k + posts)

    Good Work IK and the PTI. Let this be the start of a new era of clean govt. Tighten controls further and use the money saved from irregular expenditure and corruption on the people.

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More