وزیراعظم نے پٹرولیم بحران کی تحقیقات کیلئے 4 رکنی کمیٹی تشکیل دیدی

وزیراعظم عمران خان نے ملک میں پیٹرولیم مصنوعات کی قلت پیدا کرنے والے ذمہ داران کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کرتے ہوئے تحقیقات کیلئے 4 رکنی کمیٹی تشکیل دیدی ہے۔

کمیٹی وزیراعظم کے مشیر شہزاد سید قاسم کی سربراہی میں قائم کی گئی، جس کے دیگر اراکین میں راشد فاروق ، عاصم مرتضیٰ اور ناظر عباس زیدی شامل ہیں، کمیٹی کے چیئرمین کو یہ اختیار ہے کہ وہ کسی بھی اور شخص کو کمیٹی کا رکن بنا سکتے ہیں۔

وزیراعظم آفس سے جاری کردہ نوٹی فیکیشن کے مطابق کمیٹی پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اثر اس کی امپورٹ اور فراہمی میں تعطل کی وجوہات کو سامنے لائے گی، اس کے علاوہ کمیٹی آئل کمپنیوں کی جانب سے مصنوعی قلت کے شبے پر بھی تحقیقات کرے گی جبکہ آئل ڈپوؤں سے پیٹرول پمپس تک سپلائی میں رکاوٹ کو بھی زیر غور لایا جائے گا۔

انکوائری کمیٹی اس بحران میں آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کے کردار کا جائزہ لے گی اور ان کے قلت کو ختم کرنے کے اقدامات کو بھی تحقیقات کا حصہ بنایا جائے گا، کمیٹی کو یہ ٹاسک دیا گیا ہے کہ وہ تحقیقات کرے کہ کیسےآئل کمپنیاں مارکیٹ کو اپنے منافع کیلئے قابو کرسکتی ہیں، اور بحران پیدا ہونے کے دیگر عوامل کا جائزہ لے ۔

یاد رہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں واضح کمی کے بعد ملک میں آئل بحران پیدا کردیا گیا تھا جس کے بعد عوام کی پیٹرول کی حصول کیلئے پمپس پر لمبی لمبی قطاریں لگ گئیں تھی، پھر اچانک حکومت کی جانب سے پیٹرول کی قیمت میں یکمشت 25 روپے سے زائد کے اضافے کے بعد صورتحال معمول پر آگئی تھی جس کے بعد عوامی حلقوں میں یہ رائے زور پکڑ گئی کہ بحران پیٹرول مافیا نے مصنوعی طور پر پیدا کیا اور قیمتوں میں اضافہ بھی حکومت نے ان ہی کے دباؤ میں آکر کیا۔

OR comment as anonymous below

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے


24 گھنٹوں کے دوران 🔥

View More

From Our Blogs in last 24 hours 🔥

View More