پائلٹس کو جعلی لائسنس جاری کرنے میں ملوث ایوی ایشن کے 5 افسران معطل

پائلٹس کو جعلی لائسنس جاری کرنے میں ملوث ایوی ایشن کے 5 افسران معطل

سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پائلٹس کو مبینہ طور پر جعلی لائسنس جاری کرنے میں ملوث 5 افسران کو معطل کردیا ہے۔
کراچی میں پی آئی اے کے طیارے کو پیش آنے والے حادثے کی تحقیقاتی رپورٹ کے بعد ملک میں ایک نیا تنازعہ کھڑا ہوگیا ہے، تحقیقاتی رپورٹ میں جہاز کے پائلٹ کو قصور وار ٹھہرائے جانے نے پی آئی اے کے پائلٹس کو جاری لائسنسز پر سوال کھڑے کردیے جس کے بعد یہ انکشاف ہوا کہ پی آئی اے میں 200 سے زائد پائلٹس جعلی لائسنسز پر بھرتی ہوئے ہیں۔

حکومت کی جانب سے اس معاملے پر تحقیقات کا حکم دیا گیا اور جعلی لائسنس رکھنے والے پائلٹس کی شناخت کرنے کیلئے کمیٹی تشکیل دیدی گئی، جس کے بعد سول ایوی ایشن اتھارٹی نے انکوائری میں سامنے آنے والے 5 افسران جو کہ جعلی لائسنس جاری کرنے میں مبینہ طور پر ملوث تھے ان کو معطل کردیا ہے۔

معطل ہونے والے افسران میں لائسنس برانچ کے سینئر جوائنٹ ڈائریکٹر اور ایچ آر سپروائزر بھی شامل ہیں، ان افراد پر الزام ہے کہ یہ امتحانوں میں اصل امیدواروں کی جگہ دوسرے لوگوں کو ان کی جگہ پرچے دلواتے تھے۔

سی اے اے کی جانب سے جاری کردی نوٹیفیکیشن کے مطابق یہ تمام افسران انکوائرئ کے دوران جعلی لائسنس کے اجراء، عہدے کا ناجائز استعمال اور غیر قانونی کارروائیوں میں ملوث ہونے کے شبے پر فی الفور تاحکم ثانی معطل کیے جاتے ہیں۔
یاد رہے کہ ایوی ایشن ڈیژن نے چند روز قبل انکشاف کیا تھا کہ پی آئی اے، ایئر بلو اور سیرین ایئر لائن کے 160 پائلٹس کے لائسنسز مشکوک پائے گئے ہیں، جس کے بعد ان تمام پائلٹس کو گراؤنڈ کرنے کے احکامات بھی دیئے گئے تھے۔

  • یہاں جب اچھے دن آتے ہیں تو بس اتنے ہی آتے ہیں کہ جو افسر لوگوں کی زندگیوں کا سودا کرتے پکڑے جائیں انہیں صرف معطل کر دیا جائے۔ ان افسران کو دراصل عمر قید کی سزا ہونی چاہیئے۔

  • Sanitize the whole aviation system. Turn the carpet upside down and start afresh by employing totally new team. How dare can these persons damage the image of.PIA an airline which has been examplary all over the world.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >