پی آئی اے کے اسسٹنٹ منیجر کی ڈگری جعلی، نوکری سے فارغ

جعلی ڈگریاں رکھنے والے پی آئی اے ملازمین کی برطرفیاں شروع کردی گئیں۔ تحقیقات کے دوران پی آئی اے کے اسسٹنٹ منیجر فلائٹ سروس خالد محمود جدون کی بی اے کی ڈگری جعلی نکلی تھی جس کے بعد اب پی آئی اے انتظامیہ نےانہیں نوکری سے فارغ کردیا ہے، برطرفی کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔

نوٹیفکیشن کے مطابق سابق اسسٹنٹ منیجر کو  بی اے کی جعلی ڈگری جمع کروانے کی وجہ سے گزشتہ سال دسمبر میں شوکاز نوٹس پیش دیا گیا تھا۔انکوائری مکمل ہونے کے بعد تفتیشی افسر نے انہیں جعلی ڈگری رکھنے کا مجرم قرار دیا۔ پی آئی اے انتظامیہ کے مطابق ڈگریوں کی جانچ پڑتال کے دوران اسسٹنٹ منیجر فلائٹ سروس خالد محمود جدون نے انکوائری میں تسلی بخش جواب بھی نہیں دیا تھا جس پر فوری ایکشن لیتے ہوئے انہیں برطرف کردیا گیا ہے۔

 

اس سے قبل 30 جون کو ، یورپی یونین ایوی ایشن سیفٹی ایجنسی نے  پی آئی اے کا فلائٹ آپریشن معطل کردیا تھا۔پی آئی اے کے ایک عہدیدار کے مطابق اس معاملے پر ای اے ایس اے کے ساتھ رابطے میں ہیں، امید ہے کہ یہ معطلی جلد ہی ختم کردی جائے گی۔ جبکہ متحدہ عرب امارات کے حکام نے متحدہ عرب امارات میں مختلف ایئر لائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس، عہدیداروں اور انجینئرز کی ڈگریوں کی تصدیق کے لئے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹیز  سے بھی رابطہ کیا ہے۔

دوسری جانب پی آئی اے نے جعلی ڈگری کے حامل ڈیڑھ سو پائلٹس کے نام سول ایوی ایشن سے مانگے ہوئے ہیں اور فوری طور پر گراؤنڈ کرنے کا فیصلہ  کیا ہے۔

حکومتی وزیر نے پی آئی اے میں جعلی ڈگریوں کا انکشاف کیا تھا جس پر کاروائیاں بھی جاری ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >