لاہور میں بھی خاتون کی ٹریفک وارڈن سے بدتمیزی کا واقعہ سامنے آ گیا، ویڈیو وائرل

لاہور میں پیش آنے والے اس واقعے میں ٹریفک وارڈن نے ایک خاتون کو غلط پارکنگ کرنے پر روکا جس پر خاتون آگ بگولہ ہو گئی۔ ایک صارف نے اس سارے واقعے کی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر شیئر کر دی۔

اس صارف کی جانب سے لکھا گیا کہ خاتون نے پہلے غلط پارکنگ کی جب ٹریفک وارڈن نے منع کیا تو اس کو دو تھپڑ بھی جَڑ دیئے۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ خاتون بجاے اپنی غلطی تسلیم کرنے کے دھمکیاں اور دست درازی پر اتر آئی ہیں۔ اس کے علاوہ خاتون کو بدتمیزی کرتے ہوئے بھی دیکھا جا سکتا ہے۔

جس کے ساتھ ساتھ وہ کسی سے فون پربات کرتے ہوئے ٹریفک وارڈن کو دھمکیاں دے رہی ہیں کہ میں ایک فون کروں گی تو تمہاری نوکری چلی جائے گی، تمہاری وردی اتر جائے گی۔

ویڈیو میں صاف ظاہر ہے کہ ٹریفک وارڈن نے کسی قسم کی بدتمیزی نہیں کی، وہ صرف اپنی ڈیوٹی کر رہا ہوتا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستان میں یہ اس نوعیت کا پہلا واقع نہیں ہے۔ کچھ عرصہ قبل کراچی سے بھی ایک خاتون کا اسی طرح کا واقع سامنے آیا تھا جس نے ٹریفک وارڈن سے بدتمیزی کی تھی۔ تا ہم اس ویڈیو میں بھی ٹریفک اہلکار کو ہی زیادتی کا نشانہ بنتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔

جبکہ ایک واقعہ اسلام آباد سے سامنے آیا تھا جس میں خاتون لاک ڈاؤن کے باعث بند کیے گئے راستے پر جانے کے لیے بضد ہوتی ہیں یہ واقعہ بھی سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوا تھا۔

ان تینوں واقعات میں ایک چیز آپس میں مماثلت رکھتی ہے، وہ یہ کہ ان واقعات میں خواتین کسی با اثر گھرانے سے تعلق رکھتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ایسے لوگ سڑکوں پر چلتے ہوئے باقی لوگوں کو اپنے سے حقیر سمجھ لیتے ہیں جس کی وجہ سے اس طرح کے واقعات سامنے آتے ہیں۔

اس واقعہ سے متعلق ڈی آئی جی آپریشنز لاہور کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے تصدیق کی گئی ہے کہ واقعہ کا مقدمہ تھانہ گلبرگ میں درج کر لیا گیا ہے جس میں 186,353,290,291 کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

  • کیا یہی  بد تمیزی ھے ھمارے ملک میں یہ عورت کیا کرنا چاھتی ھے اگر ایسا ھی رویہ رھا اس ایلیٹ کلاس کا تو انقلاب آنے میں دیر نہیں  لگے گی

  • ise aur iske hote sote ko sakht saza di jai…. ye khabees kanjaron ki nasl hai jinhain iss hukumat men power milgaya…. forun dismiss 

     waahid hal inqelab e islami ke zarye sharia’t ka nifaz…. haq ke liye jiddojohad, sabr aur Allah per tawakkal…. FIRQBAZI HARAM HAI, SIRF MUSLIM BANO

     

  • پتہ نہیں ان لوگوں سے کب ہماری جان چھوٹے گی، کوئی اس غریب پولیس والے کے دل سے بھی پوچھے کہ دوران ڈیوٹی اس طرح کے ان توہین برداشت کرنا کتنا مشکل ہوا ہوگا اس بیچارے کے لیے،

    میں اس پولیس والے کو سلام پیش کرتا ہوں

     

  • Our government need to be punished this type of aunties once in live channel program n remove the pent in discussion n also invited the person who they give the reference trust me next not too be used anyone name….

  • PM and CM needs to give clear-cut message to all bureaucracy and military personnel that none of them should interfere in the matters related to their families and friends. Let their families and friends deal it at their own if they have broken some law. None of them should phone that government officer who is implementing law.

  • یہاں  اگر  کسی  مرد  نے  ایسے  کسی  عورت  وارڈن  کے  ساتھ  بدتمیزی  کی  ہوتی  تو  ابھی  پورے  انٹرنیٹ  پر  عورتوں  نے  اور  تنظیموں  نے  طوفان  کھڑا  کر  دیا  ہوتا  ۔۔۔  لیکن  ابھی  اِن  سب  منافقوں  کو  سانپ  سونگھ  گیا  ہے  ۔۔۔

    اِس  طرح  کی  گھٹیا  عورتین  اپنی  گندی  تربیت  کی  نماشش  کرتی  ہیں  اور  اپنے  گندے  خاندان  کی  تشہیر  کرتی  ہیں  ۔۔۔

  • Agr Yaha Koi Gareeb Hta To Wardon waloo Ka Tashon Dakhna Walaa hna Tha…! Or pori Traffic Police ma Khalbali Mach jani the.. But when its comes to the rich people,they all Stands in thats form… #justice_should_be_equal for Everyone..

  • agar ye aurat  ye kaam kisi or country mrin krti,tu sab se pehlay is ki car ander honi thi,is ka driving license suspend kiya jana tha,phir lamba fine hona tha,phir jail honi thi ,ya phir 1 month road ki sifai karwai jani thi,but afsoos ye pakistan mein howa hy,is liay sulah ho jani hy,,q k pakistan ka qanoon ghareeb insaan k liy hay,ameer k liay londi hy,judg b  police b siasatdan b or awam b sab apis mein milay howay hain,jis ka jitna zoor chalta hy wo chalata hy,

  • This continues violations and such stupid attitude from the women is showing that not only our upper class mind set as well as our females are also going out of control. How we see women are threatening and abusing publically. This is all happening in the society due to poor implementations of law.

    Only all laws are for the poors. If you belongs to upper class, u can do what u want and after buy lawyers judges media and take the decision as u want.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >