لاہور میں ٹریفک وارڈن پر تشدد کرنے والی خاتون کی شناخت ہوگئی

خواتین کی جانب سے ٹریفک وارڈن سے بدتمیزی کے واقعات سامنے آتے رہتے ہیں,حالیہ واقعہ لاہور میں پیش آیا ہے,جہاں خاتون ٹریفک وارڈن کے روکنے پر غصے میں آگئی اور تشدد کیا,گلبرگ میں ٹریفک وارڈن پر تشدد کرنے والی خاتون کی شناخت 29 سالہ رئیسہ مسعود کے نام سے ہوئی ہے، خاتون لاہور کے علاقے نیو گارڈن ٹاؤن کی رہائشی ہے۔

پولیس کے مطابق خاتون کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں، جبکہ واقعے میں استعمال ہونے والی گاڑی کو تحویل میں لے لیا گیا ہے۔

دوسری جانب نجی ٹی وی کے رپورٹر کے مطابق خاتون کو گرفتاری سے قبل ہی ضمانت مل گئی ہے

اس سے قبل گلبرگ میں ہی خاتون نے ٹریفک وارڈن سے بدتمیزی کی اور اسے سنگین نتائج کی دھمکیاں دی تھیں,خاتون نے وارڈن سے وائر لیس سیٹ بھی چھیننے کی کوشش کی تھی۔

  • This is what I always say, when the powerful institute backs such non sense for their own people, then all other mafias get a reason for ebing above law. Now this one is relative to a beaurocrat, tomorrow someone from lawyers will take law in hand, day after tomorrow someone from yound doctors and it will keep on going like this.

    If law has to be implemented properly, it has to start from the most powerful in the country, otherwise, we keep posting and seeing such incidents and have a topic for a day or two, until next one comes.

  • en sub aurtoun ku ultaa atkaa ker en ku michii lagani acheye….aur en ke bundoun ke ouper aur nechey mirchii wala dandaa dena chahey ju apni auratoun ke pechwarey mein chupp ker ye kaam kerwatey hein….

  • The police arrested Amir Tehkal within hour’s why bcz he wasn’t belonging to a strong family..

    So what problems are they facing in arresting this women ..

    The entire system of the country is fucked up the money of elite class people..

    If you’re having money here in pakistan do whatever you want..

    No body will not dare to see towards you. 😒

  • تھپڑ مارتے جاو اور ضمانتیں کرواتے جاو یہ ھی عمران خان کی ریاست مدینہ حکومت اس حکومت میں کوئی دم خم ھی نہیں ھے جو وامان پر عملدرآمد  کروا سکے کیوں ضمانت ھوئی جس طرح تھپڑ مارا ھے وہ مارا جائے گا اور جو گالیاں دیں ھیں وہ بھی دی جا ئیں گی اور جو کچھ اس واروں کے ساتھ ھوا ھے وھی اسکے ساتھ ھو گا پھر پتہ چلے گا ریاست مدینہ کا

  • اس جیسی عورتوں کو اس لیۓ بھی کوئی ہاتھ نہیں لگا سکتا یا گرفتاری سے پہلے ہی ضمانت حاصل کرتی ہیں کیوکہ انکو اپنی لکیر پے پورا بھروسہ ہوتا ہے،


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >