پشاورمیں غیرت کے نام پرلڑکا لڑکی قتل، کفن اورجنازے کے بغیرتدفین

پشاورمیں غیرت کے نام پرلڑکا لڑکی قتل، کفن اورجنازے کے بغیرتدفین

پشاورمیں تھانہ یکہ توت کے علاقے دیرقالونی میں دل دہلادینے والا واقعہ سامنے آگیا، غیرت کے نام پر6 روزقبل 21 سالہ نوجوان وقاص اور16 سالہ لڑکی کوقتل کرکے لاشوں کو بغیر جنازے کے دفنانے کا انکشاف سامنے آگیا۔

تفصیلات کے مطابق رات کی تاریکی میں نوجوان لڑکے اور لڑکی کو قتل کرنے والے تین ملزمان صالح محمد، نورالدین اور شہاب الدین کو بھی گرفتارکرلیا گیا ہے۔

ملزمان نے ابتدائی تفتیش کے دوران دو جولائی کو نوجوان طالبعلم وقاص اورمسمات کو قتل اور بغیر تجہیز و تکفین کے الگ الگ مقامات پر خاموشی کے ساتھ دفن کرنے کا انکشاف کیا ہے۔

پولیس نے دونوں قبروں کی شناخت کرکے قبروں کی حفاظت اورملزمان کی جانب سے لاشوں کوکسی نامعلوم جگہ منتقل کرنے کے خدشے کے پیش نظر پولیس گارڈ تعینات کردیا اور قبرکشائی کے لیے عدالت سے رجوع کرلیا ہے، جس کے بعد مقتولین کا پوسٹ مارٹم کیا جائے گا۔

تفتیشی ٹیم کے مطابق وقاص اورمسمات قریبی رشتہ دارتھے دونوں کی آپس میں دوستی تھی، غیرت کے نام پر لڑکی کے چچا ہشام نے فائرنگ کر کے دونوں کو گھر کے اندر قتل کیا جبکہ ملزم واردات کے بعد فرار ہوگئے، لڑکی کے والد سمیت دو افراد کو گرفتار کر لیا گیا جبکہ مرکزی ملزم کی تلاش جاری ہے۔

تفتیشی ٹیم کے مطابق جس روز یہ واقعہ ہوا، اس روز لڑکی کے گھر والوں نے وقاص کے چچا سے رابطہ کیا، جس پرانہوں نے کہا کہ جو فیصلہ آپ کرتے ہیں ہمیں قبول ہے۔ پولیس نے وقاص کے چچا کو بھی گرفتارکر کے شامل تفتیش کرلیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >