حکومتی رکن اسلم خان کے خواتین بارے نازیبا الفاظ پر قومی اسمبلی میں ہنگامہ

حکومتی رکن اسلم خان کے خواتین بارے نازیبا الفاظ پر قومی اسمبلی میں ہنگامہ

قومی اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کی زیر صدارت آج ہونے والے قومی اسمبلی کے اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اسلم خان کے خواتین اراکین کے خلاف نازیبا زبان استعمال کرنے پر ایوان میں شدید ہنگامہ آرائی شروع ہوگئی اور ایوان مچھلی منڈی کا منظر پیش کرنے لگا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کی رکن قومی اسمبلی نے ملک میں بڑھتی ہوئی لوڈ شیڈنگ پر وفاقی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے استعفے کا مطالبہ کیا، رکن قومی اسمبلی نے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ آپ دو سال کی بات کرتے ہیں استعفی دے کر گھر چلے جائیں پاکستان پیپلزپارٹی دو ماہ کے اندر لوڈشیڈنگ کا مسئلہ  حل کرکے دکھائے گی۔

ڈپٹی سپیکرقاسم  سوری نے پاکستان پیپلز پارٹی کی رکن اسمبلی کے بعد جب فلور وفاقی وزیر عمر ایوب کو دیا تو عمر ایوب کی گفتگو کے دوران ہی پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی اسلم خان نے پاکستان پیپلز پارٹی کو بدتمیز کہہ دیا، جس کے بعد پیپلز پارٹی کی رکن قومی اسمبلی اور تحریک انصاف کے اسلم خان کے درمیان سخت جملوں کا تبادلہ ہوا۔

خواتین کے شدید احتجاج کرنے پر ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری  نے اسلم خان سے درخواست کی کہ وہ کھڑے ہوکر اپنے الفاظ واپس لے اور خواتین اراکین کے خلاف بولے نازیبا الفاظ پر معافی مانگے، جس پر اسلم خان نے اپنے الفاظ واپس لیتے ہوئے خواتین اراکین سے معذرت کی، جس کے بعد ایوان کی کارروائی آگے بڑھائی گئی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>