اجمل وزیر کو عہدے سے ہٹانے کے بعد انکی مبینہ آڈیو ریکارڈنگ سامنے آ گئی

وزیراعظم عمران خان نے مبینہ آڈیو ریکارڈنگ سامنے آنے پر وزیر اطلاعات خیبر پختونخوا اجمل وزیر کو عہدے سے فوری طور پر ہٹانے کا حکم دیا، جس کے بعد معاون خصوصی کامران خان بنگش کو محکمہ اطلاعات کا قلمدان دے دیا گیا ہے۔

اجمل وزیر کی کمیشن لینے کے حوالے سے آڈیو ریکارڈنگ منظر عام پر آئی تھی۔

ریکارڈنگ کے دوران اجمل وزیر اور اشتہاری ایجنسی کے مالک کے درمیان کمیشن کی ڈیل ہوئی تھی, وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا نے چیف سیکریٹری کو معاملے کی تحقیقات کا حکم بھی دے دیا۔

ایک اور نجی ٹی وی کے مطابق اجمل وزیر نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان سے کہا تھا کہ وہ ذاتی وجوہات کی بنا پر مزید خدمات جاری نہیں رکھ سکتے۔گزشتہ رات بھی بلڈ پریشر کی وجہ سے اسپتال میں کئی گھنٹے زیر علاج رہے تھے۔

اجمل وزیر کو رواں سال ہی شوکت یوسف زئی کی جگہ اطلاعات کا قلمدان سونپا گیا تھا۔ اجمل وزیر دوہزار اٹھارہ کےالیکشن سے قبل تحریک انصاف کا حصہ بنے,پھر مختلف عہدوں پر کام کرتے رہے,اس سے قبل وہ ق لیگ میں خدمات انجام دیتے رہے ہیں۔

  • یہی فرق ہے جاہل حرام خور چور فرا ڈی نورے  بٹوں رام گلی کے …… میں اور عمران خان نے لوگوں کو ہوشیار پوری کوٹھے کی پیداوار رانا مردود جو اپنے آپ کو مردود کی جگہ مشہود  کہتا ہے جب اسی طرح  ایک وڈیو کلپ میں اپنی گھر والوں کی قیمت وصول کرتے ہوۓ پورے پاکستان نے دیکھا تھا لیکن نواز شریف بٹ جیسے حرام خور چور فراڈ ی لعنتی منی لا نڈر نے اسکو مسلسل وزیر بھی بنائے رکھا


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >