اسلام آباد میں مندر کی تعمیر پر مولانا فضل الرحمان کی متوازن رائے

اسلام آباد میں مندر کی تعمیر پر اسلامی نظریاتی کونسل یا وفاقی شرعی عدالت سے رہنمائی لی جائے،مولانا فضل الرحمان

مولانا فضل الرحمان نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کے معاملے پر اپنی رائے دے دی۔ میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ کسی اسلامی مملکت یا اسلامی شہر میں غیر مسلموں کے عبادت خانے بنانے پر ہم نے کہا ہے کہ بجائے اس کے ہر فرد اپنی رائے دے اسے اسلامی نظریاتی کونسل بھیج دینا چاہئے،یا وفاقی شرعی عدالت اس کو سنے،تاکہ ادھوری صورتحال واضح ہوجائے، اور اس کے مطابق تعاون کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ بات واضح ہے کہ پاکستان کسی جنگ کی بنیاد پر وجود میں نہیں آیا بلکہ یہ برصغیر کے لوگوں کی باہمی صلح سے بنا ہے اس لحاظ سے اقلتیوں کی حیثیت دیگر شہریوں کے برابر ہوتی ہے۔

دوسری جانب وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری کا کہنا تھا کہ وفاقی دارالحکومت میں مندرکی تعمیر کا فیصلہ اسلامی نظریاتی کونسل کرے گی۔

ابھی تک مندر کیلئے حکومت نے فی الحال کسی قسم کے فنڈز نہیں دیے اور اس کے متعلق فیصلہ بھی وزیراعظم عمران خان ہی کریں گے اور تمام تر سماجی اور مذہبی پہلوؤں کو مدنظر رکھا جائے گا۔ جبکہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھی مندر کی تعمیر کے خلاف دائر کی گئیں درخواستوں کو غیر موثر قرار دیکر نمٹا دیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >