مدرسے میں زیر تعلیم 2 بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنانے والا معلم گرفتار

مدرسے میں زیر تعلیم 2 بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنانے والا معلم گرفتار

راولپنڈی میں تھانہ نصیر آباد کے علاقے مسکین آباد میں ایک انتہائی شرم ناک واقعہ پیش آیا، جس میں بچوں کو اچھے اور برے کی تعلیم دینے والے مدرسے کے معلم  کودو بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا۔

مذکورہ معاملہ کے حوالے سے تھانہ نصیر آباد کی پولیس نے بتایا کہ مسکین آباد کے زیادتی کا نشانہ بننے والے 12 سالہ بچے کے ماموں نے پولیس کو بتایا کہ مسکین آباد کے مقامی مدرسے کے قاری حمید احمد نے میرے بھانجے کو زیادتی کا نشانہ بنایا ہے جو اس کے پاس حفظ کرنے کے لئے جایا کرتا تھا، قاری حمید احمد میرے بھانجے سے قبل بھی 10سالہ بچے کو متعدد بار اپنی ہوس کا نشانہ بنا چکا ہے۔

12 سالہ متاثرہ بچے کے ماموں کا پولیس کو دیئے گئے بیان میں کہنا تھا کہ ایک دن چھوٹے بھائی نے روتے ہوئے اپنے بڑے بھائی کو بتایا کہ مدرسے کے قاری غازی حمید احمد نے مجھے زبردستی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے اور مجھے کسی کو بھی بتانے سے منع کیا ہے، اس نے مجھے کسی کو بتانے کی صورت میں قتل اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رکھی ہیں۔

دوسری جانب تھانہ نصیر آباد کی پولیس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ زیادتی کا نشانہ بننے والے بچے کے ماموں کی درخواست پر بچوں کا طبی معائنہ کروا کر ملزم کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی گئی ہے، پولیس پارٹی کی جانب سے ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپہ مارا گیا جس میں قاری حمید احمد کو گرفتار کرلیا، تاہم ملزم کی ڈی این اے رپورٹ آنے کے بعد مزید کارروائی آگے بڑھائی جائے گی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >