بی آر ٹی منصوبے کی کمپنی کو مزید 3 منصوبوں سے نواز دیا گیا

بی آر ٹی منصوبے کی کمپنی کو مزید 3 منصوبوں سے نواز دیا گیا

پشاور بی آر ٹی تعمیر کرنے والی کمپنی کو مزید 3 ترقیاتی منصوبوں کے ٹھیکے دیئے جانے پر تحریک انصاف اور ن لیگ آمنے سامنے۔

پشاور میں تحریک انصاف کے گزشتہ دور حکومت میں شروع کیے گئے بی آر ٹی منصوبے کو بنانے والی کمپنی کو وفاقی حکومت کی جانب سے مزید 3 ترقیاتی منصوبوں کے ٹھیکوں سے نواز دیا گیا ہے جس پر اپوزیشن جماعتوں خصوصاً مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کی جانب سے شدید تنقید جاری ہے۔

بی آر ٹی منصوبے کی کمپنی کو مزید 3 منصوبوں سے نواز دیا گیا

مسلم لیگ ن کی سیکرٹری اطلاعات مریم اورنگزیب نے شائع ہونے والی خبر کو ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا کہ پشاور بی آرٹی بنانے والی کمپنی کو وفاقی حکومت نے تین مزید منصوبوں کے ٹھیکوں سے نواز دیا ہے۔

ان کی اس ٹویٹ پر تحریک انصاف کے رہنماؤں کی جانب سے کرارے جوابات دیئے گئے، ترجمان پنجاب حکومت مسرت جمشید چیمہ نے ٹویٹ کیا کہ یہ وہی کمپنی ہے جس نے لاہور اور ملتان میٹرو منصوبوں پر کام کیا ہے، مسلم لیگ ن جب سے سیاسی طور پر یتیم ہوئی ہے ایس ہی شر انگیزی پھیلانے کی کوشش کرتی ہے۔

تحریک انصاف کے ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات احمد جنجوعہ کا کہنا تھا کہ مریم اورنگزیب نے جو خبر شیئر کی اس کے مطابق اس کمپنی کو ٹھیکہ کھلی نیلامی کے ذریعے دیا گیا، اس میں کوئی مسئلہ نظر نہیں آتا، تاہم اس واقعے کو پشاور بی آر ٹی منصوبے سے جوڑنے کا کوئی جواز نہیں ہے۔

وزیراعلی پنجاب کے فوکل پرسن برائے ڈیجیٹل میڈیا اظہر مشہوانی کا کہنا تھا کہ اسی کمپنی نے پنڈی میٹرو، ملتان میٹرو، ایف سی انڈر پاس لاہور، کارساز فلائی  کراچی سمیت بہت سے دوسرے منصوبے تعمیر کیے ہیں جو تحریک انصاف کے علاوہ دیگر حکومتوں کے تھے، اس کمپنی کو نئے تین منصوبوں کا ٹھیکہ اس لیے دیا گیا ہے کیونکہ انہوں نے سب سے کم بولی لگائی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ شہباز شریف ، سعد رفیق، اور احد چیمہ پر آشیانہ ہاؤسنگ کے الزامات ہیں، اس منصوبے میں شہباز شریف نے ایک کمپنی کے ساتھ معاہدے کو کینسل کرکے دوسری کمپنی کو دیا، یہ کمپنیاں ایل ڈی اےسے اورنج لائن میٹرو میں بلیک لسٹ کردی گئی تھیں۔

اظہر مشہوانی نے مزید کہا کہ اگر کوئی کمپنی بلیک لسٹ نہیں ہے، اور نیلامی میں سب سے کم بولی لگاتی ہے، تو یہ تمام ارسطو لوگ حکومت سے کس فیصلے کی امید کرتے ہیں؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >