راولپنڈی میں لڑکی نے لڑکا بن کر لڑکی سے شادی کرلی

راولپنڈی میں لڑکی نے لڑکا بن کر لڑکی سے شادی کرلی

راولپنڈی کے علاقے ٹیکسلا میں لڑکی نے لڑکا بن کر لڑکی سے شادی کرلی جس پر ایک لڑکی کے باپ نے عدالت سے رجوع کرلیا ۔ لڑکی کے والد نے موقف اپنایا کہ میری بیٹی کے ساتھ اسکی سہیلی نے لڑکا بن کر کورٹ میرج کی ہے، لڑکا بن کر شادی کرنیوالی لڑکی نے لڑکے کے نام سے شناختی کارڈ بنارکھا ہے۔

لڑکی کے والد کے مطابق عاصمہ نے شناختی کارڈ میں آکاش کے نام سے اندراج کرواکر نیہا نامی لڑکی سے شادی کی، دونوں لڑکیوں نے عدالت میں پیش ہوکر دھوکہ دہی سے کورٹ میرج کی۔

نیہا کے والد کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن ہائیکورٹ راولپنڈی بنچ میں سماعت کیلئے منظور کر لی گئی، لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بنچ نے نوٹس جاری کرتے ہوئے دونوں لڑکیوں کو بدھ 15 جولائی کو طلب کر لیا ہے۔

نیہا کی کےو الد کے کے مطابق دونوں لڑکیوں کے نکاح نامے کا اندراج کنٹونمنٹ بورڈ وارڈ نمبر دس میں ہوا، آکاش علی کے لڑکی ہونے کی تمام دستاویزات عدالت کو فراہم کردیں جبکہ عاصمہ بی بی نے نادرا دفتر سے اپنا شناختی کارڈ تبدیل کروایا۔عاصمہ بی بی کے مطابق اس نے اپنی جنس تبدیل کروائی ہے جبکہ پاکستان میں جنس کی تبدیلی ناممکن بھی ہے اور غیر شرعی بھی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >