سی اے اے نے 21 پاکستانی پائلٹس کو کلیئر قرار دے دیا

غیر ملکی ایئر لائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹ کے لیے اچھی خبر، سی اے اے نے 21 پاکستانی پائلٹس کو کلیئر قرار دے دیا

پاکستان میں جعلی ڈگری اور لائسنس رکھنے والے پائلٹس کی انکوائری رپورٹ منظرعام پر آنے کے بعد سے غیر ملکی ایئرلائنز میں کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا تھا، کیونکہ غیر ملکی ایئرلائنز کی سول ایوی ایشن اتھارٹیز نے ان کے ساتھ کام کرنے والے پاکستانی پائلٹس اور انجینئرز کو کام کرنے سے روکتے ہوئے ان کو گراؤنڈ کر دیا تھا اور ان کی ڈگریوں کی تصدیق کے لیے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کو خط لکھا تھا۔

باوثوق ذرائع کے مطابق غیر ملکی ایئرلائنز میں کام کرنے والے پائلٹس کے لئے خوشخبری ہے کہ پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے غیر ملکی ایئرلائنز میں کام کرنے والے 21 پائلٹس کی ڈگریوں اور لائسنس کی تصدیق کر دی گئی ہے اور انہیں کلیئر قرار دے دیا گیا ہے۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل نے 21 پائلٹس کے لائسنس کے فرانزک آڈٹ کے بعد انہیں کلیئر قرار دیا ہے، جن 21 پائلٹس کے لائسنسوں کو کلیئر قرار دیا گیا ہے ان میں سے 18 اومان اور 3 ہانگ کانگ کی ایئر لائنز میں کام کر رہے ہیں۔

ہانگ کانگ اور اومان کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کو خط لکھ کر ان کی ایئر لائنز میں کام کرنے والے پائلٹس کے لائسنسوں کے حوالے سے وضاحت طلب کی تھی، ڈائریکٹر جنرل سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے ہانگ کانگ اور اومان کے حکام کو آگاہ کر دیا گیا ہے کہ ان کی ایئر لائن میں کام کرنے والے تمام پاکستانی پائلٹس کے لائسنس کلیئر ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >