پب جی پر پابندی لگوانے کے بعد پنجاب پولیس کا ٹک ٹاک پر بھی پابندی لگوانے کا فیصلہ

کچھ روز قبل لاہور کے علاقے ملت پارک میں ٹک ٹاکر لڑکی اجتماعی زیادتی کا شکار ہو گئی تھی. جس کے بعد مرکزی ملزم شیراز اور اس کے 2 نامعلوم دوستوں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا تھا.

متاثرہ لڑکی کی درخواست کے مطابق 20 دن پہلے شیراز نامی لڑکے سے ٹک ٹاک پر دوستی ہوئی تھی، شیراز کے بلانے پر سمن آباد پہنچی تو اس نے گاڑی میں بیٹھنے کا کہا.

گاڑی میں بیٹھنے پر معلوم ہوا کہ گاڑی میں شیراز کے دو دوست بھی تھے، جن سب نے ملکر گن پوائنٹ پر اجتماعی زیادتی کی.

اس واقعہ کے بعد ڈی آئی جی آپریشنز نے صاف کہہ دیا ہے کہ ٹک ٹاک کو فوری بند ہوناچاہئے۔ پنجاب پولیس نے ٹک ٹاک سےمتعلق رپورٹ تیار کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ 

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ ايسی ايپس کے منفی پہلوؤں اور نقصانات کے پيش نظر والدين کو بھی اپنا کردار ادا کرنا چاہيے تاکہ نوجوان نسل سنگين جرائم ميں ملوث ہونے سے محفوظ رہے.

  • Next step, ban insta then Facebook then YouTube then internet.. Start from character building.. Ban dramas showing rich life styles.. It creates demand of jahez.. Ban Pakistani dramas spreading vulgarity and focused on extra matrimonial or incestuous relationships..

  • Allah ko bhool bethy hai sab…. Ghaflat Mai parh gye koi khyaal nhi k Maa baap ko izzat bi koi cheez hai.. pehli galti to larki ki hai k abi 20 din hoay dosti ko to milny chali gai nawabzadi.. Maa baap ki izzat ko kuchal KR PTA nhi tha k log nhi janwar ghoom rhy hai bahir balky darindy .. Bus Allah Pak sabko hidayat Dy


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >