فیصل آباد: 18 سال بعد محکمہ تعلیم نے 143 جعلی اساتذہ پکڑ لئے

فیصل آباد: 18 سال بعد محکمہ تعلیم نے 143 جعلی اساتذہ پکڑ لئے

فیصل آباد کے محکمہ تعلیم نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے 18 سال سے بوگس ڈگریوں پر تعینات 143 اساتذہ کو پکڑ لیا، بوگس ڈگریوں پر تعینات 143 اساتذہ سال 2002، 2004، 2006 اور 2008 کی بھرتیوں کی جانچ پڑتال کے دوران پکڑے گئے ہیں، پکڑے جانے والے 143 اساتذہ میں سے کچھ کی ڈگریاں جعلی اور کچھ کے تقرر نامے جعلی پائے گئے ہیں۔

فیصل آباد محکمہ تعلیم نے ویری فکیشن کے دوران انکشاف کیا ہے کہ پکڑے جانے والے اساتذہ 13 سے 18 سال سے بوگس تقررناموں پر تنخواہیں لے رہے تھے، ان پکڑے جانے والے اساتذہ کے خلاف مزید کارروائی کے لیے محکمہ اینٹی کرپشن کو خط لکھ دیا گیا ہے۔

فیصل آباد کی ڈی او ایلیمنٹری مسز رضیہ تبسم کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ جب میں نے 2002 سے لیکر 2008 تک محکمہ تعلیم میں بھرتی ہونے والے اساتذہ کے ریکارڈ کو چیک کیا تو اس میں سے کچھ خواتین اساتذہ کی ڈگریاں جعلی نکلیں اور کچھ کے تقررناموں کا ریکارڈ ہی محکمہ تعلیم کے پاس موجود نہیں ہے، بوگس پائی جانے والی ان ٹیچرز کے کیسز ہم نے محکمہ اینٹی کرپشن کو بھجوا دیئے ہیں۔

ڈی او ایلیمنٹری فی میل رضیہ تبسم نے مزید بتایا کہ اس وقت کے افسران نے آنکھیں بند کر کے ان اساتذہ کو جوائننگ دے دی، جو گزشتہ 18 سال سے بوگس ڈگریوں پر تنخواہیں لے رہی ہیں، محکمہ تعلیم کو لکھے گئے خط میں ہم نے ان سے درخواست کی ہے کہ ان جعلی اساتذہ کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے ان سے 18 سال تک لی گئی تنخواہیں واپس لے کر محکمہ تعلیم میں جمع کروائیں اور قانون کے مطابق ان تمام ٹیچرز کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا جائے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >