عید قرباں کے موقع پر جانوروں کی خریداری میں کتنے فیصد کمی ہوئی؟

رواں سال قربانی کے لیے40 فیصد کم جانور خریدے گئے، کھالوں کی قیمتیں بھی گر گئیں، وجہ کیا ہے؟ تفصیلات سامنے آگئیں

کورونا وائرس کی وجہ سے بے روزگاری مہنگائی اور قوت خرید کم ہونے کے باعث گزشتہ سال کی نسبت اس سال قربانی کے لیے 40 فیصد کم جانور خریدے گئے۔

گزشتہ عیدالاضحیٰ کے موقع پر جانوروں کی خریداری کی مالیت 242ارب روپے تھی اس سال یہ مالیت 174ارب روپے رہی. کورونا وائرس کی وبا اورمہنگائی کے باعث رواں سال ملک میں قربانی گزشتہ سال کے مقابلے میں 25.9فیصد کم کی گئی۔

پاکستان ٹینریز ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین آغا سیدین کے مطابق 20لاکھ گائیں، 31 لاکھ 40ہزار بکرے،8 لاکھ بھیڑیں،60 ہزاراونٹ قربان ہوئے، یہ تعدادگزشتہ سال عید الاضحیٰ کے موقع پر قربان ہونے والے 81لاکھ جانوروں کے مقابلے میں 21لاکھ کم ہے ۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال 30لاکھ گائے،40لاکھ بکروں،10لاکھ بھیڑوں اور ایک لاکھ اونٹوں کی قربانی دی گئی جبکہ اس سال 20لاکھ گائیں،31لاکھ 40ہزار بکرے،8لاکھ بھیڑیں اور60ہزار اونٹ قربان کئے گئے۔

بین الاقوامی مارکیٹ میں خام چمڑے کی طلب کم ہونے کی وجہ سے کھال کی قیمتیں کافی کم ہوگئیں کھالوں کی قیمتیں 50 فیصد کم رہیں، ٹینریزایسوسی ایشن کے سابق صدرکا کہنا ہے کہ بکرے کی کھال 100سے 150روپے میں فروخت ہو رہی ہے جبکہ گائے کی کھال کی قیمت 6سے 700روپے پر آگئی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >