لیہ: این جی او کے ساتھ کام کرنے والی لڑکی کو ساتھی نے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

لیہ: این جی او کے ساتھ کام کرنے والی لڑکی کو ساتھی نے زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

لیہ: این جی او کے ساتھ کام کرنے والی لڑکی کا دفتر کے ساتھی نے بلیک میل کر کے ریپ کر دیا۔

ضلع لیہ میں ایک افسوس ناک واقعہ پیش آیا، جس میں این جی او کے ساتھ کام کرنے والی ایک لڑکی کو دفتر کے ایک ساتھی نے مبینہ طور پر بلیک میل کر کے ریپ کا نشانہ بنا ڈالا۔

تفصیلات کے مطابق کروڑ لعل عیسن پولیس کو ایک لڑکی کی جانب سے ایف آئی آر درج کروائی گئی، جس میں لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ وہ ایک غیر سرکاری تنظیم میں کام کرتی ہے جہاں پر موجود اس کے دفتر کے ساتھی نے مبینہ طور پر بلیک میل کر کے زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔

لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ وہ ضلع بھکر کی تحصیل درگا خان کے چک نمبر 54-ایم ایل کی رہائشی ہے اور کروڑ شہر میں ایک این جی او کے ساتھ کام کرتی اور اسی این جی او کی بالائی منزل پر رہائش پذیر تھی۔

متاثرہ لڑکی کے مطابق اس کے دفتر کے ایک ساتھی کے ساتھ غیرضروری تعلقات استوار ہو گئے تھے، جس پر اس نے کچھ غیر مناسب تصاویر اور ویڈیوز بنا لی تھیں، جن کا استعمال کرکے ملزم متعدد بار زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔

لڑکی نے بتایا کہ وقوعہ کی رات وہ اپنے کمرے میں سو رہی تھی کہ ملزم اپنے ساتھی کے ساتھ میرے کمرے میں داخل ہوگیا، ملزم کے ساتھی نے میرے سر پر بندوق تانی رکھی جب کہ ملزم مجھے زیادتی کا نشانہ بناتا رہا، بعد ازاں ملزمان مجھے زبردستی اپنے ساتھ لے جانا چاہتے تھے کہ چیخ و پکار سن کر اہل علاقہ  جمع ہو گئے اور دونوں ملزمان موقع سے فرار ہوگئے۔

دوسری جانب کروڑ لعل عیسن کے تفتیشی افسر کامران اظہر کا کہنا تھا کہ لڑکی کی درخواست پر پولیس نے پاکستان پینل کوڈ کی دفعہ 376 اور 292 کے تحت 2 ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی، لڑکی کی میڈیکل رپورٹ میں بھی اس کے ساتھ زیادتی کی تصدیق ہوئی ہے، تاہم ملزمان فرار ہیں جنہیں جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >