کرونا سے نمٹنے کے لیے دنیا کو پاکستان سے سیکھنے کی ضرورت ہے، صدر جنرل اسمبلی

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے صدر وولکن بوزکر نے پاکستان کے دورے کے دوران شاہ محمود قریشی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کرونا سے نمٹنے کے لیے دنیا کو پاکستان کی کوششوں سے سیکھنے کی ضرورت ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے نومنتخب صدر وولکن بوزکر کے ہمراہ کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے نومنتخب صدر کے ساتھ ملاقات کافی خوشگوار رہی ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہم نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے صدر کے ساتھ ہونے والی ملاقات میں انہیں کرونا سے نمٹنے کے لیے کیے گئے اقدامات، افغانستان میں قیام امن کے لیے کی گئی کوششوں اور مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی جانب سے جاری غیر انسانی سرگرمیوں کے حوالے سے آگاہ کیا ہے ۔

اس موقع پر موجود جنرل اسمبلی کے نومنتخب صدر وولکن بوزکر کا کہنا تھا کہ مجھے پاکستان آکر بہت خوشی محسوس ہو رہی ہے، پاکستان نے بہت اچھے انداز سے میری میزبانی کی ہے، پاکستان کی جانب سے خطے میں امن کے قیام کے لیے کی گئی کوششیں قابل تعریف ہیں، پاکستان اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا اہم رکن ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ساتھ ہونے والی ملاقات میں اہم امور پر بات چیت کی گئی ہے، اس کے علاوہ وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات ہوئی ہے جس میں انہوں نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے تفصیل سے آگاہ کیا، وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ہونے والی ملاقات میں ، میں ان کے خیالات سے کافی متاثر ہوا ہوں۔

شاہ محمود قریشی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے جنرل اسمبلی کے صدر کا کہنا تھا کہ پوری دنیا اس وقت کرونا جیسی موذی بیماری سے نمٹنے کے لیے کوششیں کر رہی ہے، تاہم دنیا کو کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے پاکستان کی کوششوں سے سیکھنے کی ضرورت ہے کیوں کہ پاکستان کرونا وائرس کے خلاف بہت ہی اچھے انداز میں نبرد آزما ہے، جس کی بدولت پاکستان میں کرونا وائرس کے کیسز میں نمایاں کمی آئی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >