اسرائیلی خاتون ایجنٹ سوشل میڈیا پر فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے، وزیر مذہبی امور

اسرائیل میں موساد کی ایک خاتون "عائشہ” نام استعمال کر کے سوشل میڈیا پر فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے، وزیر مذہبی امور

وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نورالحق قادری کا اسلامی نظریاتی کونسل کے زیر اہتمام "مختلف مسالک کے درمیان روابط و حسن تعامل کا لائحہ عمل” کے عنوان سے منعقدہ کنونشن سے خطاب کے دوران انکشاف کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اسرائیل میں موساد کی ایک خاتون رکن "عائشہ” نام استعمال کر کے سوشل میڈیا پر فرقہ وارانہ مواد پھیلا رہی ہے، وہ بہت اچھی عربی بولتی ہے، یہ خاتون اپنے جعلی اکاؤنٹ سے سوشل میڈیا پر فرقہ وارانہ مواد پھیلا تی ہے جسے بعد میں اہل تشیع اور سنی بنا کچھ سوچے سمجھے شیئر کرنا شروع کر دیتے ہیں۔

وفاقی وزیر کا اسلامی نظریاتی کونسل کے زیر اہتمام منعقدہ کنونشن میں خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ گزشتہ کچھ عرصے سے نوٹ کیا جا رہا ہے کہ مقدس ہستیوں کے بارے میں سوشل میڈیا پر توہین آمیز گفتگو بڑھتی جا رہی ہے جو کہ ایک پوری منصوبہ بندی کے تحت کیا جا رہا ہے لیکن کچھ نا سمجھ اور جذباتی لوگ بنا کچھ سوچے سمجھے اس کے پیچھے لگ جاتے ہیں اور اپنا ایمان گنوا بیٹھے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ چار عشروں سے پاکستان کو لسانی، مذہبی، مسلکی، علاقائی بنیادوں پر عدم استحکام کا شکار کر کے تقسیم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے، لیکن پاکستان کو تقسیم کرنے کی کوششیں کرنے والوں کو ہمیشہ ناکامی کا سامنا رہا، تاہم اب ایک آخری کوشش اہل تشیع، سنی، بریلوی، دیوبندی، سلفی کے درمیان فرقہ وارانہ فسادات پیدا کرکے پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی ناکام کوشش کی جا رہی ہے۔

وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نورالحق قادری کا کہنا تھا کہ اسلامی نظریاتی کونسل کے زیر اہتمام منعقد ہونے والے کنونشن کا مقصد اسرائیل کی ایجنٹ خاتون کے ہاتھوں سوشل میڈیا پر پھیلائے گئے فرقہ وارانہ مواد کے ذریعے اپنے علماء کرام اور عوام الناس کو استعمال ہونے سے بچانا ہے، تاکہ ملک میں عدم استحکام پیدا نہ ہو۔

انہوں نے کہا کہ مکہ مکرمہ میں کچھ سال پہلے آٹھ فرقوں کا اعلان تسلیم کیا گیا تھا، فرقوں کے درمیان اختلاف پیدا کرنا زحمت جب کہ اختلاف رائے رحمت ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ علمائے کرام کی مدد سے حکومت کرونا وائرس کو قابو کرنے میں کامیاب ہوئی ہے، تاہم یہ ہماری بدقسمتی ضرور ہے کہ محرم الحرام کے آتے ہی انتظامی افسران کی جانب سے علمائے کرام کو پر امن رہنے کی تلقین کی جاتی ہے، تاہم محرم الحرام کے دوران پر امن رہنے کا یہ کام علمائے کرام کو خود کرنا چاہیے، لیکن اگر وہ پرامن نہیں رہتے تو حکومت ہر صورت اپنی رٹ برقرار رکھے گی۔

  • to ya jahil molvi keh raha hain k islam ko khatra aik yahoodi aurat ki social media tweets say ho gaya hain.. hum kab in jahilo say azzad hoon gay . yahoodio ko aur koi kaam nahi k abb sirf morally bankcourpt aur tecnologically backward muslamano k peechay paray hain . i guess we had enough bullshit form molvis and its time to move on

    • Kisi ko ek insan sy koi khtra nhi hota
      Lykin us insan k phylaye hoye fasaad nuqsan pohncha skty Hain.
      Her dfa Din ky rehber ghalat nhi hota
      Kbhi kbhi hamry demagh main bhi androoni nuqs hota hy.
      Bilawaja kisi pe zuban Kasny sy behtr hy insan kbhi apna dimagh bhi istemal kr ly. Allah ny is nemat ka bhi hisab Lena hy.

    • O pagal, shut ur bucket mouth. Jb apko islam k bare koch nai pta to bkwas b mat kr. Allah ne qoran mai our Muhammad S, ne ahadees mai frmaya hai k ye yahood o naswara moslman k doshman hai our ye kbi apke dost nai ban skty. To tm Kis kait ki moli ho our bghair koi logic k bak rhy ho. Hm beshak kmzor hai but inka hum se dar hai. Qoran o ahadees ki bat jhot nai hoskti, Insha Allah hum (moslman) dobara ayngy our rehti donya k Islam ka jnda lehraingy, our ye qoran ki bat hai


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >