نوکری کے پہلے دن کراچی آنیوالے19 سالہ کنڈیکٹر فیضان کی المناک موت

کے الیکٹرک سب سٹیشن میں سیلفی بنانے کے دوران کرنٹ لگنے سے19 سالہ نوجوان جاں بحق

کراچی ڈیفنس کے الیکٹرک سب سٹیشن میں سیلفی بناتے کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہونے والا 19 سالہ فیضان بس پر کنڈکٹر کی پہلی نوکری کے پہلے ہی دن کراچی آیا تھا جس نے پیر کی شام قیوم آباد سے اسی بس پر گاؤں واپس لوٹ جانا تھا مگر اب اسی بس پر اس کی میت مانسہرہ روانہ کر دی گئی ہے۔

فیضان بس کے پہلے ہی چکر پر پہلی بار 10 اگست کی رات کراچی پہنچا تھا۔ اس نے بس کے ساتھ 11 اگست کی سہہ پہر 4 بجے واپس مانسہرہ روانہ ہونا تھا۔

متوفی فیضان کے چچا فیاض کے مطابق نوعمر فیضان قیوم آباد سے ملحق ڈیفنس فیز 7 میں زبیر مسجد کے قریب کے الیکٹرک کے سب سٹیشن کے ساتھ کھڑا ہو کر موبائل فون سے سیلفی بنا رہا تھا کہ دیوار میں کرنٹ پھیلنے کی وجہ سے چپک کر ہلاک ہو گیا۔

پولیس کے مطابق کے الیکٹرک کے سب سٹیشن کا مرکزی دروازہ موجود نہیں تھا جس وجہ سے بچے کھیلتے ہوئے سب سٹیشن کے اندر چلے گئے جہاں اندر کی دیوار کے ساتھ فیضان کو کرنٹ لگا۔ 22 اگست کو متوفی کی اکلوتی بہن کی شادی طے تھی۔

پولیس کے مطابق کارروائی کے بعد میت لواحقین کے حوالے کردی گئی ہے۔ فیضان نے جس بس پر کنڈکٹری کرتے ہوئے اپنے گاؤں مانسہرہ واپس جانا تھا اسی بس سے اب اس کی میت روانہ کر دی گئی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >