‏موٹروے زیادتی کیس: متاثرہ خاتون نے ملزم عابد اور شفقت کی شناخت کر لی

لاہور سیالکوٹ موٹروے پر زیادتی کے کیس میں اہم پیشرفت ہوئی ہے، جس میں متاثرہ خاتون نے گرفتار ہونے والے شفقت اور فرار ہونے والے مرکزی ملزم عابد ملہی کی شناخت کر لی ہے ۔

پولیس نے متاثرہ خاتون کو دونوں ملزمان کی تصاویر بھیجی تھیں، جس پر متاثرہ خاتون نے ملزمان کی شناخت کرتے ہوئے انہیں پھانسی کی سزا دینے کا مطالبہ کر دیا، جبکہ پولیس نے منصوبہ بندی میں ملوث مرکزی ملزم اقبال مستری عرف بالا مستری کو بھی گرفتار کر لیا ہے ۔

پولیس نے ملزم شفقت علی کی نشاندہی پر بالا مستری کو چیچہ وطنی سے گرفتار کیا ہے، جب کہ زیادتی کے مرکزی ملزم عابد علی تاحال قانون کی گرفت میں نہیں آ سکا ہے جسے گرفتار کرنے کے لئے پولیس کی جانب سے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت نے گرفتار ہونے والے شفقت علی کو 14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کیا تھا اور تفتیشی افسر کو ملزم کی جلد سے جلد شناخت پریڈ کروانے کی ہدایت کی تھی۔

  • نہیں
    صرف پھانسی سے کام نہیں چلے گا
    یہ تو بہت آسان موت ہے — یہ تو ان
    پر احسان ہو گا
    ان کے نفس کاٹ کر انہیں عمر قید
    بغیر پیرول کے.
    اور ان کو کیمرہ کی آنکھ سے ساری
    عمر ہر روز لائیو دیکھایا جاتا رہے
    تا کہ باقی عبرت پکڑیں

  • Recentenlly one of the participant on America got talent was centence for life in rape case but the victim was wrong at the time of identification because she got confused with resemblance of the actual rapist due to dark and confusion but now DNA test let this guy to be free after 3 decade. Pakistan should adopt latest method of investigation method including lie test. Look like in this case police is in hurry to put of fire from public.

    • DNA tests have already confirmed that Shafqat and Abid committed the rape. Abid‘s DNA sample was already in the record of Forensic Lab because he had committed a rape in 2013 as well. But, later on he was released because victim forgave him.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >