لاہور، لنک روڈ زیادتی کیس کا مرکزی ملزم ریکارڈ یافتہ نکلا ،25ہزار لے کر قتل کرتا رہا

لاہور کے علاقے گجرپورہ لنک روڈ پر خاتون کو بچوں کے ہمراہ زیادتی کا نشانہ بنانے والا مرکزی ملزم عابد علی پیشہ ور عادی مجرم اور سفاک قاتل ہے جو کچھ روپوں کے لیے کسی کی بھی جان لے لیتا تھا۔ عابد علی 4 سے زائد مختلف کیسز میں پہلے بھی گرفتار ہوچکا ہے۔

ملزم عابد علی ایک اجرتی قاتل ہے جو 25 ہزار روپے کے لیے قتل کرتا تھا، ایسے قتل کی وارداتوں میں ملزم بطور شوٹر کام کرتا رہا اور اس کے اشتہاری ملزموں سے رابطے ہیں جو ایسے جرائم میں اس کی مدد کرتے تھے۔

ملزم کی گرفتار کے لیے پولیس نے بہاولپور، بہاولنگر، سمندری اور نوشہرہ ورکاں کے علاقوں میں چھاپے مارے مگر فی الحال ملزم کا کوئی سراغ نہیں مل سکا۔

پولیس نے زیر حراست وقار کے برادر نسبتی عباس کو چھوڑ دیا، عباس کے دو بھائی سلامت اور بوٹا کو بھی چھوڑ دیا گیا۔ وقار کے برادر نسبتی اور دو بھائیوں کو گزشتہ روز حراست میں لیا گیا تھا، پولیس کا کہنا ہے کہ وقار کی رہائی کا فیصلہ ڈی این اے رپورٹ آنے کے بعد کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ کچھ روز قبل لاہور کے گجرپورہ لنک روڈ پر خاتون کو بچوں کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا، پولیس نے چھاپہ مار کارروائی کے دوران ملزم شفقت کو گرفتار کرلیا جبکہ مرکزی ملزم عابد علی کی گرفتاری کے لیے ابھی بھی کارروائیاں کی جا رہی ہیں۔

  • Police should search the areas which are popular for Ishtahris…as police knew these all areas in Panjab.. Increase the bounty money with assurance of CM Buzdar..and give the direct no of CM..no body trust on Police…The peoples who giving them shelter..they knew about them or he with his wife hiding or living in very common place where no body know them..


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >