ٹیوشن پڑھانے کے دوران بچوں پر بیہمانہ تشدد کرنے والا پولیس کی حراست میں

ٹیوشن پڑھانے کے دوران بچوں پر بیہمانہ تشدد کرنے والا پولیس کی حراست میں

گزشتہ روز سے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہے جس میں ٹیوشن پڑھانے والے ایک شخص کو معصوم بچوں پر بدترین تشدد کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

یہ ویڈیو وائرل ہونے کے بعد سوشل میڈیا پر اس شخص کی گرفتاری کے لیے مطالبہ زور پکڑنے لگا اور کئی سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے اس کی گرفتاری کیلئے حکام بالا پر دباؤ ڈالا جانے لگا۔

ٹیوشن پڑھانے کے دوران بچوں پر بیہمانہ تشدد کرنے والا پولیس کی حراست میں

محسن بلال خان نامی سوشل میڈیا صارف نے لکھا کہ اس ظالم انسان کو فوری طور پر گرفتار کیا جانا چاہیے۔

اس ویڈیو میں اسے جن بچیوں پر تشدد کرتے دیکھا گیا ہے ان کے والد ذوالفقار احمد کی مدعیت میں جہلم سٹی پولیس سٹیشن میں مقدمہ درج کر کے اس شخص کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

مدعی مقدمہ کے مطابق ان کی دونوں بچیاں اس ٹیوشن سنٹر میں پڑھتی تھی جہاں ملزم ابوبکر بچوں کو پڑھاتا تھا مگر کچھ دنوں سے بچیاں اس تشدد کے خوف سے ٹیوشن بھی نہیں جا رہی تھیں۔ جب والد نے نہ جانے کی وجہ پوچھی تو بچیوں نے بتایا کہ وہ اس تشدد سے خوفزدہ ہیں۔

ذوالفقار کے مطابق اس تشدد سے بچیاں ذہنی و جسمانی اذیت اور کرب میں مبتلا ہیں۔

بچیوں کے والد کی درخواست کے بعد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم ابوبکر کو دفعہ 328اے کے تحت گرفتار کر لیا ہے۔

  • bhaut dafa ki aiasi video hain jin per marnay say bachay baecharay faut bhi huay hain laken saza ka kisi ko nahi suna aik mera ustad bhi tha agar zindgi main kabhi mila to khud iss ki tangain toaron ga


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >