وفاقی کابینہ نے مزید 26 پائلٹس کے لائسنس منسوخی کی منظوری دے دی

وفاقی کابینہ نے پائلٹس کے جعلی لائسنس کے معاملے پر مزید 26 پائلٹس کے لائسنس منسوخ کرنے کی منظوری دے دی ہے، وفاقی کابینہ نے عدالتی حکم امتناع پر مزید 6 پائلٹس کا لائسنس بھی منسوخ کرنے کا حکم دیا ہے۔

سول ایوی ایشن ڈویژن نے 22 پائلٹس کے جعلی لائسنسز کی سمری تیار کرکے سات جولائی کو وفاقی کابینہ کو بھجوائی تھی، ایوی ایشن ڈویژن نے سمری بھیجنے  سے قبل ایوی ایشن ڈویژن نے 28 پائلٹس کے لائسنس منسوخ کر دیئے تھے۔

وفاقی کابینہ کو بھجوائی گئی سمری میں ایوی ایشن ڈویژن نے 193 پائلٹس کے مشکوک لائسنس کا ذکر کیا تھا، جس پر 22 پائلٹس کے لائسنس حتمی تحقیقات کے بعد منسوخی کے احکامات جاری کیے گئے، جس کا نوٹیفیکیشن سول ایوی ایشن ڈویژن کے سیکرٹری حسن ناصر جامی کی جانب سے جاری کیا گیا تھا۔

ایوی ایشن ذرائع کا کہنا ہے کہ 262 پائلٹس کے مشکوک لائسنسز کی تحقیقات مکمل کرلی گئی ہیں، جس میں سے 180 پائلٹس کے لائسنس کلیئر اور 80 پائلٹس کے لائسنس میں جعل سازی ثابت ہوئی، جن میں سے 50 پائلٹس کے لائسنس کے کمپیوٹر امتحان میں جعل سازی پکڑی گئی اور 32 پائلٹس کے اے ٹی پی ایل لائسنس جعلی نکلے۔

ایوی ایشن ذرایع کا کہنا ہے کہ پی آئی اے کے 141 پائلٹس میں سے 18 پائلٹس کے لائسنس جعلی نکلے ہیں، جبکہ وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد 22 پائلٹس کے خلاف کارروائی کا آغاز بھی کر دیا گیا ہے۔ جن کے خلاف جلد تحقیقات مکمل کر کے رپورٹ کابینہ کو بھجوا دی جائے گی۔

    • bcoz our Politicians hire those Pilots

      As Dr. Shahid Masood said;

      Rishwat agar neechay level pe hoti hai, tu uska k hisa b upper level ko jata hai.

      Upper level me hamare aziz elite richie rich politicians hain !!!


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >