موٹروےواقعہ: مرکزی ملزم عابد چھلاوہ بن گیا، تیسری بار پولیس کو چکمہ دے کر فرار

لاہور سیالکوٹ موٹروے پر خاتون کے ساتھ گینگ ریپ کرنے والے مرکزی ملزم عابد ملہی ایک بار پھر پولیس کو چکمہ دے کر فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا، پولیس کو ملزم عابد ملہی کی راجہ جنگ میں آمد کی اطلاع ملی تھی، لیکن وہاں پولیس کی موجودگی کا شبہ ہونے پر ملزم کھیتوں میں فرار ہو گیا۔

موٹر وے پر زیادتی کیس کے مرکزی ملزم عابد ملہی کی پولیس کی نااہلی کی وجہ سے تیسری بار فرار ہونے کی اندرونی کہانی سامنے آگئی۔ ملزم عابد پنجاب پولیس کے لیے چھلاوا بن گیا، پولیس کو ملزم کی راجہ جنگ کے گاؤں میں آمد کی اطلاع ملی تھی جس پر پولیس کے اہلکار اس کے رشتے دار کے گھر گھات لگا کر بیٹھ گئے۔

ذرائع کے مطابق عابد گزشتہ رات پونے آٹھ بجے مذکورہ حویلی میں بہن کے پاس  پہنچا تھا، مبینہ طور پر پولیس کے صرف 4 اہلکار راجہ جنگ کے گھر میں موجود تھے، پولیس کی موجودگی کا شک ہونے پر ملزم عابد اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فورا وہاں سے فرار ہو گیا۔

لاہور پولیس نے ملزم کے فرار ہونے کے فورا بعد چار گھنٹے تک بھاری نفری کی مدد سے سرچ آپریشن جاری رکھا لیکن موٹروے گینگ ریپ کا مرکزی ملزم پھر بھی پولیس کے ہتھے نہ چڑھا اور پولیس کو چکمہ دے کر فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔

دوسری جانب پولیس نے ملزم عابد کی اہلیہ بشری بی بی کا بیان ریکارڈ کرلیا ہے، جس میں بشری بی بی کا کہنا تھا کہ واردات کے بعد عابد گھر آیا تھا، وہ کافی پریشان دکھائی دے رہا تھا، اس کی شناخت ہوئی تو وہ فرار ہو گیا، مجھے نہیں معلوم کہ وہ اس وقت کہاں ہے۔

ملزم کی قصور میں موجودگی کی اطلاع پر پولیس کے بارہ سو اہلکاروں نے قصور میں سرچ آپریشن کیا جس کے دوران پولیس نے ملزم عابد ملہی کے پانچ قریبی رشتہ داروں کو حراست میں لے لیا ہے،  پولیس کی گرفتار ملزم شفقت علی سے بھی تفتیش  جاری  ہے ۔

خیال رہے کہ موٹروے پر خاتون کے ساتھ اس کے بچوں کے سامنے گینگ ریپ کرنے والا مرکزی ملزم عابد ملہی اس سے قبل شیخوپورہ اور مانگا منڈی سے بھی فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا تھا۔

  • Agr mai kahon ye [email protected]®@mi pakra ja chuka aur police custody mai he hai tu ap log ziyada shock nai hona, police awami nubs ( trends/ remarks) dekh rai hai k is sath kya hona chiye, agr % sar e aam phansi ki ziyada hue tu isko encounter pahadka de gy agr awami aggression kum nZar aya tu arrest show kr dy gy

  • اس کیس میں کچھ انتہائی اہم سوالات جواب طلب ہیں۔ سب سے پہلا سوال یہ ہے کہ جب متاثرہ خاتون نے موٹر وے پولیس کو کال کی تو آگے سے لوکل پولیس کا نمبر دیا گیا اور خاتون نے اس نمبر پہ کال کی۔ وہ نمبر کس کا تھا اور وہ کال کس نے اٹھائی تھی۔ جس نے بھی اس کال کو ریسیو کیا تھا اس کے بارے ہمیں سارا میڈیا اور خود پولیس خاموش ہے۔ دوسرا سوال کیا بالے مستری کا فون ریکارڈ چیک کیا گیا ہے کہ واردات سے ایک دو گھنٹے پہلے اس کو کس کس شخص نے فون کیا۔ کیا اس لسٹ میں گجر پورہ کے تھانیدار شاہ زیب کا نام
    بھی تو نہیں؟ ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >