ایس اوپیز نظر انداز، ایک بار پھر کرونا وائرس کے کیسز بڑھنے لگے

ایس او پیز نظرانداز ہوئے،سماجی فاصلے بھی ختم ہوگیا، احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد نہ کرنے کرنے بدترین نتائج سامنے آنے لگے، ایک بار پھرکورونا وائرس نے پاکستان میں خطرے کی گھنٹی بجادی، ایک دن میں چونتیس ہزار کے قریب ٹیسٹ ہوئے، جس میں سے سات سو باون کیسز رپورٹ ہوئے،

جو بارہ اگست کے بعد سے تین روز میں دوسری بار سب سے زیادہ ریکارڈ کیسز ہیں، ملک میں کورونا کیسزکی تصدیق شدہ تعداد تین لاکھ چار ہزارتین سو چھیاسی تک جاپہنچی،ایک دن میں نو پاکستانی کورونا کا شکار ہوکرجاں بحق ہوگئے، اب تک موذی وائرس سے چھ ہزار چارسو آٹھ اموات ہوچکی ہیں۔

دوسری جانب تعلیمی اداروں میں صحت کی گائیڈ لائنز پرعملدرآمد نہ کرنے کی صورت میں نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے اعداد شمارجاری کیے ، گزشتہ ایک روز میں مزید 13 تعلیمی اداروں کوبند کیا گیا ، این سی او سی کے مطابق تعلیمی ادارے ایس او پیز پرعمل نہ کرنے پر بند کئے گئے ،سب سے زیادہ خیبرپختونخوا میں10 تعلیمی ادارے بند کیے گئے

جبکہ سندھ میں تین تعلیمی اداروں کوسیل کیا گیا، اسکول کھلنے کے بعد پہلے روزبائیس اسکول بند کیے گئے،این سی او سی کے گزشتہ روز کے اعلامیہ کے مطابق بھی کورونا ایس اوپیز کی خلاف ورزی پر22 تعلیمی ادارے سیل کیے گئے جس میں خیبرپختونخوا کے 16، آزاد کشمیرکے 5 اور اسلام آباد کا ایک ادارہ شامل تھا۔

یومیہ کیسز میں اضافے نے طبی ماہرین کوبھی تشویش میں مبتلا کردیا۔ انہوں نے اپیل کی ہے کہ ایس اوپیز پر عمل کریں کیونکہ کورونا کم ہوا ختم نہیں ہوا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >