نوازشریف کی تقریر تمام چینلز پر لائیو کیوں نشر ہوئی؟

نوازشریف کی تقریر تمام چینلز پر لائیو کیوں نشر ہوئی؟ معلوم ہوگیا۔۔۔ وزیراعظم عمران خان نے ہی نواز شریف کی تقریر نشر کی اجازت دی ۔

وزیراعظم عمران خان نے نیوز چینلز کو اے پی سی میں نواز شریف کی ویڈیو لنک کے ذریعے تقریر شروع ہونے سے پہلے اسے نشر کی اجازت دیدی تھی،وزیراعظم عمران خان نے نواز شریف کی تقریر سے قبل ہدایت جاری کی کہ نواز شریف کی تقریر نیوز چینلز کو نشر کرنے دی جائے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نوازشریف اپنی تقریر سے عوام میں خود ایکسپوز ہوں گے، وہ جھوٹ بول رہے ہیں ان کو جھوٹ بولنے دیں،وزیراعظم نے معاونین اور مشیروں کی جانب سے پیمرا کو خط لکھنے کی تجویز کو مسترد کردیا اور کہا کہ نوازشریف جھوٹ بولیں گے اس لیے عوام کو خود فیصلہ کرنے دیا جائے۔

دوسری جانب اے پی سی میں خطاب میں نواز شریف نے کہا کہ ان کی جدوجہد پاکستان کے موجودہ وزیر اعظم عمران خان کے خلاف نہیں بلکہ انھیں اقتدار میں لانے والوں کے خلاف ہے،اے پی سی کو بامقصد بنانا ہوگا،

پاکستان کو تجربات کی لیبارٹی بنا کر رکھ دیا گیا ہے،ایک باربھی منتخب وزیراعظم کو آئینی مدت مکمل نہیں کرنےدی گئی،ملک میں جمہوریت کمزور ہو گئی ہے اور عوام کی حمایت سے کوئی جمہوری حکومت بن جائے تو کیسے ان کے خلاف سازش ہوتی ہے اور قومی سلامتی کے خلاف نشان دہی کرنے پر انھیں غدار قرار دے دیا جاتا ہے۔

آج ہونیوالی اے پی سی میں نوازشریف نے نہ صرف فوج بلکہ نواز شریف کے سی سی پی اور لاہور عمر شیخ، سابق ڈی جی آئی ایس پی آر آصف غفور ، چئیرمین سی پیک اتھارٹی عاصم باجوہ اور چیئرمین نیب جسٹس ر جاوید اقبال پر سنگین الزامات لگائے۔ اپنی تقریر میں نواز شریف نے ڈان لیکس کا بھی اعتراف کیا۔

نواز شریف نے میر شکیل الرحمن کو اپنا قریبی ساتھی اور دوست قرار دے دیا اور اسلام آباد ہائیکورٹ کے سابق جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی کے حق میں بھی آواز اٹھائی۔

  • سارا پاکستان جانتا ھے ایک رسید تو دے نہ سکا یہ لوہار خاندان اور بیشرم انسان لندن میں جائیدادیں بنا کر بیٹھا ھے عوام کو تو شرم آتی ھے لیکن اس ڈھیٹ خاندان کی شرم ختم ہو گئی ھے

  • Unfortunately his politics revolves only around himself and his family. He can do anything to save his assets made by money laundering and to launch his daughter in the politics. Habitual lier and absconder.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >