نیپرا کی سماعت میں کراچی والوں نے کے الیکٹرک کو ختم کرنے کا مطالبہ کر دیا

نیپرا عوامی سماعت: چیئرمین نیپرا اور تاجر رہنما کے درمیان تلخی، کے الیکٹرک سے معاہدہ ختم کر کے نئی کمپنی بنانے کا مطالبہ

چیئرمین نیپرا توصیف ایچ فاروقی کی جانب سے کراچی میں عوامی سماعت کی گئی جس میں شدید بدنظمی اور شور شرابے کا مظاہرہ کیا گیا، نیپرا کی عوامی سماعت کے دوران چیئرمین نیپرا توصیف ایچ فاروقی اور کراچی چیمبر کے سابق صدر و تاجر رہنما سراج قاسم تیلی کے درمیان تلخ  کلامی ہو گئی۔

نیپرا کی عوامی سماعت کے دوران کراچی چیمبر کے سابق صدر اور تاجر رہنما سراج قاسم تیلی نے کہا کہ اگر کراچی میں کے الیکٹرک کی اجارہ داری ختم کر دی جائے تو تاجر برادری بجلی کی نئی ڈسٹریبیوشن کمپنی بنانے کے لیے تیار ہے، جس پر چیئرمین نیپرا نے انہیں ٹوکتے ہوئے کہا کہ کہیں ایسا نہ ہو جائے کہ کے الیکٹرک کا لائسنس بھی منسوخ کر دیا جائے اور نئی الیکٹرک سپلائی کمپنی بھی نا بن سکے، جس پر دونوں میں تلخی بڑھ گئی۔

عوامی سماعت کے موقع پر موجود جاوید بلوانی نے چیئرمین نیپرا سے کہا کہ اگر آپ ان اسٹیک ہولڈرز کو نہیں سنیں گے تو نیپرا یہاں لینے کیا آیا ہے، جس پر چیئرمین نیپرا توصیف فاروقی نے سخت لہجہ اپناتے ہوئے کہا کہ یہاں ہال میں موجود جو بھی فرد منظم انداز میں بات نہیں کرے گا اسے ہال سے باہر نکال دیا جائے گا جس پر ہال میں شدید بدنظمی اور شورشرابا شروع ہوگیا اور پورا ہال کے الیکٹرک کے خلاف اور انصاف کی فراہمی کے نعروں سے گونج اٹھا۔

سماعت کے موقع پر شدید بدنظمی اور نعروں کے باعث چیئرمین نیپرا نے سماعت کچھ دیر کے لیے ملتوی کر دی، تاہم سماعت دوبارہ شروع ہوئی تو کے الیکٹرک کے چیف فنانشل آفیسر عامر غازیانی نے کہا کہ نیپرا ایکٹ میں جو ترمیم کی گئی ہے اسکے تحت ہمیں 2023 تک کام کرنے کی اجازت ہے، ہم بھی چاہتے ہیں کے الیکٹرک کے علاوہ دیگر کمپنیاں بھی بجلی کی ترسیل میں آئیں، لیکن نئی آنے والی کمپنیوں کو سستی بجلی کی ترسیل کیسے کرنی ہے طے کرنا ہوگا۔

سماعت کے دوران ایم کیو ایم کے خواجہ اظہار اور پیپلز پارٹی کے کمال اظفر کے درمیان تلخ جملوں کا بھی تبادلہ ہوا۔ کمال اظفر نے کہا کہ الیکٹرک کو جب فروخت کیا گیا ایم کیو ایم نے سہولت کاری کی ، وہ آج کس منہ سے بات کر رہی ہے، جس پر خواجہ اظہار نشست سے کھڑے ہو گئے اور شدید احتجاج کیا۔ اس دوران دونوں طرف سے نعرے بازی ہوئی اور شور شرابہ شروع ہوگیا۔ شور شرابے اور بد نظمی پر سماعت ختم کردی گئی۔

نیپرا نے عوامی سماعت ختم کرتے ہوئے اعلان کیا کہ کراچی میں کے الیکٹرک کے حوالے سے عوامی سماعت مکمل ہو گئی ہے اب اس معاملے پر مزید بحث نہیں ہوگی بلکہ اب سماعت کا فیصلہ جاری کیا جائے گا، جبکہ نیپرا میں اگلے دس روز تک کے الیکٹرک کے معاملے پر تحریری کمنٹس جمع کروائے جا سکتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >