الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کی سکروٹنی رپورٹ نامکمل قرار دے دی

الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کی فارن فنڈنگ سکروٹنی رپورٹ نامکمل قرار دے دی

الیکشن کمیشن میں جمع کرائی گئی غیر ملکی فنڈنگ کی سکروٹنی رپورٹ کو الیکشن کمیشن نے نامکمل قرار دے دیا، الیکشن کمیشن نے رپورٹ نامکمل قرار دیتے ہوئے چھ ہفتوں کے اندر غیر ملکی فنڈنگ کی تحقیقات مکمل کر کے تفصیلی رپورٹ جمع کروانے کی ہدایت کردی۔

الیکشن کمیشن کا اپنے جاری حکم نامے میں کہنا تھا کہ تکلیف دہ ہے کہ 29 ماہ گزر جانے کے باوجود کوئی ٹھوس رائے نہیں دی گئی، اسکروٹنی کمیٹی نے جمع کروائی گئی رپورٹ میں نا مکمل تفصیلات فراہم کرتے ہوئے اسٹیٹ بینک کی دستاویزات اور ریکارڈ کی جانچ پڑتال نہیں کی۔

الیکشن کمیشن کااپنے جاری کردہ حکم نامے میں کہنا تھا کہ سکروٹنی کمیٹی نے اپنی ذمہ داری پوری نہ کرتے ہوئے دستاویزات  کی صداقت، قابل اعتبار ہونے اور ساکھ کی میرٹ پر جانچ پڑتال نہیں کی، جب کہ سکروٹنی کمیٹی کے پاس متعلقہ فورمز کے علاوہ تمام ذرائع استعمال کرنے کی سہولت موجود تھی، کمیٹی نے نا ہی درست طریقہ کار اختیار کیا بلکہ اپنی رپورٹ میں کوئی نتیجہ بھی اخذ نہیں کیا۔

دوسری جانب درخواست گزار اکبر ایس بابر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کی غیر ملکی فنڈنگ کی سکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ کمیٹی نے جس طرح سے ریکارڈ اور دستاویزات کی جانچ پڑتال کرنی تھی نہیں کی۔

الیکشن کمیشن نے نامکمل رپورٹ پیش کرنے پر سکروٹنی کمیٹی کی سرزنش کی۔ الیکشن کمیشن نے اسکروٹنی کمیٹی کا اجلاس 24 ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے سکروٹنی کمیٹی سے تفصیلی رپورٹ مانگ لی۔

    • پی ٹی آئی کے 90 % سپورٹرز بیرون ممالک میں مقیم ہیں اور لوگوں نے پی ٹی آئی کو چندہ دیا ھے اور دیتے ہیں ا ن میں بیرون ممالک میں ڈاکٹرز،انجیینئرز ، مزدور پیشہ افراد بزنس مین ھر طبقہ سے تعلق رکھنے والے بڑی تعداد میں موجود ہیں


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >