” بیچ چوراہے ہنڈیا پھوڑ دوں گا ” شیخ رشید کی ن لیگ کو دھمکی

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں میزبان شاہزیب خانزادہ نے سوال اٹھایا کہ وفاقی وزیر شیخ رشید نے ن لیگ کی 2 ملاقاتوں کا دعویٰ کیا ہے جبکہ آئی ایس پی آر کی جانب سے بھی 2 ملاقاتوں کا بتایا گیا ہے، انہوں نے وزیر ریلوے سے پوچھا کے آخر کتنی ملاقاتیں ہوئیں اور کون کون ان ملاقاتوں میں ملا؟

وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا کہ ابھی میں نے فیصل آباد پھر لاہور اور کراچی جانا ہے میں ہر جگہ بتاتا رہوں گا گھبرانا نہیں ہے میں ان کو نہیں چھوڑوں گا۔

میزبان نے سوال کیا کہ آرمی چیف اور ڈی جی آئی ایس آئی اپوزیشن رہنماؤں سے کتنی بار ملتے ہیں اور ملتے رہیں گے؟

شیخ رشید نے جواب دیا کہ اپوزیشن سے رابطہ رکھنا اور ملک میں قیام امن کی فضا کو برقرار رکھنا فوج کا کام ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جب ہمایوں اختر کے والد ڈی جی آئی ایس آئی تھے تو وہ ان سے ملنے لال حویلی آتے تھے۔ کیونکہ فوج کا کام ملک کو ہر طرح کی ناگہانی آفات سے بچانا ہے کیونکہ پاکستانی فوج نے وہ وہ کام کیے جو ان کے کرنے والے نہیں تھے۔

شیخ رشید نے کہا کہ فوج کے جوانوں نے نالوں کی صفائیاں کیں، بھاشا ڈیم بنایا، سی پیک پر کڑی پہرے داری کی ،ٹڈی دل سے ملک کو فوج نے بچایا ، نیلم جہلم فوج نے بنایا اسی طرح قیام امن اور جمہوریت کی مضبوطی کے لیے فوج کی ملاقات ضروری تھی کیونکہ وزیراعظم سے ملاقات میں پارلیمانی نمائندے کھل کر بات نہیں کرتے۔

شیخ رشید نے مریم نواز کے ملاقات نہ ہونے کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے شہباز شریف کے ساتھ اس ملاقات میں ایک میز پر بیٹھ کر کھانا کھایا ہے مگر مریم کہتی ہیں کہ کوئی نمائندہ نہیں ملا اور ن لیگ سے شین لیگ نہیں بننے جا رہی۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان کا پاور سنٹر پاک فوج ہے جو جمہوریت سمیت جملہ شعبوں میں پاکستان کو آگے بڑھانا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر جمہوریت کو نقصان پہنچا تو ذمہ دار کان پکڑ کے کھڑے ہوں گے۔

شیخ رشید نے کہا ملنے والوں کے ناموں کے حوالے سے بتایا کہ انہوں نے اس کے لیے آئی ایس پی آر سے اجازت طلب کی ہے کہ ناموں کو سامنے لانے کی اجازت دی جائے مگر ان کو فی الحال اجازت نہیں ملی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >