سول ملٹری امتزاج پر مبنی نظام سے سے جو ٹکرائے گا نقصان اٹھائے گا، کامران خان

سول ملٹری امتزاج پر مبنی نظام سے سے جو ٹکرائے گا نقصان اٹھائے گا، کامران خان

سینئر صحافی و اینکر پرسن کامران خان نے کہا ہے کہ حالیہ دنوں میں رونما ہونے والے واقعات نے عمران خان کی حکومت کو بہت مضبوط کردیا ہے۔

اپنے نئے ویڈیو بلاگ میں کامران خان نے کہا کہ پاکستان کے سول ملٹری ہائبرڈ نظام میں نئی جان پڑ چکی ہے، اور مارچ میں ہونے والے سینیٹ الیکشن میں اس نظام کو مزید بے پناہ تقویت ملے گی۔

کامران خان نے کہا کہ اس سینیٹ الیکشن کے بعد عمران خان کی جماعت سینیٹ کی سب سے بڑی جماعت بن جائے گی ، حکومت اور اتحادیوں کی سینیٹ میں تعداد اتنی ہوگی کہ عوام سینیٹ چیئرمین کے خلاف اپوزیشن کی تحریک عدم اعتماد کو ہونے والی شکست بھول جائیں گے۔

سینئر صحافی کا کہنا تھا کہ عمران خان حکومت کے استحکام کا ٹرننگ پوائنٹ  اپوزیشن کی اے پی سی میں نواز شریف کی ری انٹری تھی، نواز شریف نے اپنی 54 منٹ کی تقریر میں اسٹیبلشمنٹ کو صلواتیں سنائیں اور بغیر کہے یہ اعلان بھی کردیا کہ وہ غیر اعلانیہ مدت تک لندن میں ہی مقیم رہیں گے۔

کامران خان نے دعویٰ کیا کہ مسلم لیگ ن میں نواز شریف کے شدت پسند بیانیے کے حامی مٹھی بھر سے زیادہ نہیں ہے، فیصلہ سازی کا اختیار شہباز شریف کے پاس ہے، آصف علی زردار ی اور شہباز شریف دونوں نے پکی جی حضوری لکھوالی ہے، اور دونوں وہی کریں گے جو کہا جائے گا، عمران خان کی سربراہی میں سول ملٹری امتزاج پر مبنی نظام سے جو ٹکرائے گا نقصان اٹھائے گا۔

  • Hindustan Times, Writes on Sep 24, 2020

    Pak oppn alliance against Imran Khan is crumbling.
    Opposition leaders’ meeting with army chief ahead of their grand alliance formation has led to doubting and accusations within the grouping.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >