میرے بیان کو میڈیا نے سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا ، احسن اقبال

اپنے حالیہ بیان پر احسن اقبال کا کہنا تھا کہ نواز شریف کا اے پی سی میں خطاب اوپر سے لے کر نیچے تک پارٹی کے ہر کارکن کی آواز ہے ، اپوزیشن پارٹی رہنماؤں کی کانفرس کے بعد حکومتی ایوانوں میں زلزلہ برپا ہے ،

میرے بیان کو میڈیا نے سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا ، نواز شریف ن لیگ کے قائد ہیں ، نواز شریف کا ہر لفظ ہر جملہ پارٹی کے کارکن کیلئے محترم ہے

نوازشریف کی 20 ستمبر کو منعقد ہونے والی اپوزیشن کی ورچوئل اے پی سی میں تقریر نے لیگی رہنماؤں کو سوچنے پر مجبور کر دیا۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام کے دوران میزبان نے احسن اقبال سے پوچھا کہ جس طرح نوازشریف نے اپنی تقریر میں اداروں کو نشانہ بنایا تو کیا یہ تقریر اے پی سی کے مشترکہ اعلامیے کے معیار پر پورا اترتی ہے؟

میزبان نے سوال کیا کہ نواز شریف کی تقریر کے الفاظ کو پارٹی پالیسی سمجھا جانا چاہیے اور کیا پارٹی نواز شریف کے موقف سے اتفاق کرتی ہے؟

جواب میں سینئر لیگی رہنما احسن اقبال نے کہا نواز شریف کی رائے ایک ایسے سینئر سیاستدان کی رائے تھی جس نے 3 بار وزارت عظمیٰ کو سنبھالا اور وہ پاکستان کے سب سے سینئر سیاستدانوں میں شمار ہوتے ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ اے پی سی کے مشترکہ اعلامیے کے علاوہ انہوں نے ملک کو درپیش موجودہ چیلنجز کی نشاندہی کی اور نوازشریف نے جن نکتوں پر بات کووہ سب پوائنٹ بعد میں اے پی سی کی ڈکلیریشن میں سمو دیئے گئے ہیں۔

میزبان ڈاکٹر عرفان اشرف نے جب پوچھا کہ نواز شریف کی تقریر تمام سیاسی جماعتوں کا بیانیہ تھا؟ جس پر احسن اقبال بولے کے نہیں ان کی تقریر ان کی ذاتی رائے تھی۔

مگر ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان کے تمام مطالبات اپوزیشن کے متفقہ ڈکلیریشن پر پورا اترتے ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >