طلال چوہدری پولیس کی تحقیقاتی ٹیم کو بیان دیے بنا ہسپتال سے غائب ہو گئے

مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کی جانب سے اپنی ہی پارٹی کی ایم این اے کو ہراساں کرنے کے معاملے پر پنجاب پولیس طلال چوہدری کا بیان ریکارڈ کرنے کے لیے لاہور کے نیشنل ہسپتال پہنچی، لیکن پولیس کے ہسپتال پہنچنے سے قبل ہی طلال چوہدری وہاں سے ہسپتال کا بل ادا کئے بغیر روانہ ہو گئے۔

خبر رساں ذرائع کے مطابق طلال چوہدری کو ہسپتال کے پچھلے دروازے سے  قریبی ساتھی نے فرار کروایا، طلال چوہدری کے ہسپتال سے پولیس کے پہنچنے سے پہلے فرار ہونے پر بتایا جا رہا ہے کہ طلال چوہدری ہسپتال سے جلد بازی میں روانہ ہوئے اور جانے سے پہلے ہسپتال کا بل بھی ادا نہ کیا۔

ڈی ایس پی عبدالخالق کا اس حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ طلال چوہدری کو ہمارے پہنچنے سے پہلے ہی ہسپتال سے ڈسچارج کر دیا گیا ہے، ہسپتال والوں نے ہمیں بتایا کہ طلال چوہدری کو ایک گھنٹہ قبل ہی ہسپتال سے ڈسچارج کیا جاچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جلد ہی طلال چوہدری سے رابطہ کر کے ان کا بیان ریکارڈ کرلیا جائے گا، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ ہسپتال کی جانب سے انہیں طلال چوہدری کے ڈسچارج ہونے کی سلپ  نہیں دکھائی گئی۔

  • Hahahaha kitni masoomiyat se Police wala bayaan de raha hai, ooh Begairtoo gareeb insan per agar shaq ho k uss ne koi crime keeya hai to agar wo gher per na mille to tum haram khor aur harami uss k baap bhai ko uthaa k le jate ho, jab koi takar ka powerful banda milta hai to tum log ussey bhaga dete ho aur phir kehte ho masoomiyat se k wo chala gaya, agar chala gaya bina bill adaa kiay to pakro hospital walo ko b daalo andar,, phir aik aur FIR register karo k bill adaa kiay bagair talal chd bhaag gaya,, harami haram khor idara hai ye police ka..


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >