نواز شریف حکومت کی نہیں کسی اور کی انڈرسٹینڈنگ سے باہر گئے، شہزاد اکبر

نواز شریف حکومت کی نہیں کسی اور کی انڈرسٹینڈنگ سے باہر گئے، شہزاد اکبر

وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر کا نجی ٹی وی کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہنا تھا کہ نواز شریف حکومت کی نہیں بلکہ کسی اور کی انڈرسٹینڈنگ سے باہر گیا ہے، فی الوقت اسے ملک میں واپس لانا مشکل ہے لیکن اسے واپس ضرور لائیں گے۔

شہزاد اکبر کا خصوصی انٹرویو میں کہنا تھا کہ اس بات کی تصدیق کرنی چاہیے کہ کیا واقعی ہی ان کی طبیعت اتنی خراب تھی جتنی ان کی میڈیکل رپورٹ میں بتائی جا رہی تھی، اگر ایسا نہیں ہے تو پھر وہ کسی کی انڈرسٹینڈنگ سے باہر گئے ہیں، اگر وہ جہاز والے کے ساتھ یا کسی ڈاکٹر کے ساتھ ملے ہوئے تھے تو یہ انڈرسٹینڈنگ ہو سکتی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کو ملک میں واپس لانا تھوڑا مشکل کام ہے لیکن ہم انشاللہ ان کو واپس ضرور لائیں گے، بہت سارے مجرم ملک میں اکٹھے پھر رہے ہوتے ہیں اور ریلیف لینے کے لئے کبھی ایک دروازے اور کبھی دوسرے دروازے پر جاتے ہیں، یہ ایسے لیڈر ہیں کہ جب مشکل وقت آتا ہے تو اپنے کارکنوں کو چھوڑ کر باہر بھاگ جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کے صاحبزادے سلمان شہباز کو بھی واپس بلانا چاہیے،ساڑھے تین ارب روپے کی منی لانڈرنگ ان کے اکاؤنٹ سے ہوئی ہے، منی لانڈرنگ کا بڑا حصہ نوازشریف کے پاس گیا ہے جبکہ شہباز شریف کا خانوادہ سمجھتا تھا کہ انہیں لوٹ کا کم حصہ ملا ہے تو انہوں نے اپنے لوٹ کا بازار گرم کر لیا اور ملک سے اربوں روپے کی منی لانڈرنگ کی۔

معاون خصوصی برائے احتساب نے کہا کہ چوہدری شوگر مل آل شریف کا کیس ہے، چوہدری شوگر مل نے کچھ ایسے کردار ہیں جن کا نام استعمال کر کے منی لانڈرنگ کرکے اپنے اکاؤنٹ میں پیسہ ڈالا گیا، جہاں بھی ہاتھ لگایا ان کی منی لانڈرنگ کی داستان نکلتی ہے، ہل میٹل والے کیس میں جس کی مریم نواز صاحبہ بینیفیشری ہیں ان کو اس چیز کا حساب دینا ہوگا کہ ان کے پاس اتنا پیسہ کہاں سے آیا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں ڈرایا جاتا ہے کہ کل کو آپ کی بھی باری آنی ہے، اگر ہم ان کی بات مان لیں تو یہ چوروں کا معاہدہ ہوگا، اس وقت ن لیگ کے اندر قیادت کی بھی جنگ چل رہی ہے، جب مریم صاحبہ کو احساس ہوا کہ شہباز شریف صاحب پارٹی میں لیڈ لے رہے ہیں تو کچھ ہو نہ ہو وہ رنگ میں بھنگ ڈالنے کی کوشش کرتی ہیں، وہ نواز شریف کا بیانیہ کھڑا کر کے یاد کرواتی ہیں کہ لیڈرشپ کی دعویدار میں بھی ہوں۔

  • Shahzad Akbar Sahib
    Are u saying PMIK was telling lie to this nation that despite cabinet members he decided to let a convicted go outside on humanitarian basis?
    PMIK should investigate this Shahzad Akbar.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >