شوکت خانم ہسپتال پر الزامات، عدالت کا حنیف عباسی پر بھاری جرمانہ عائد

ن لیگ کے حنیف عباسی پر شوکت خانم میں کرپشن الزامات پر 50 لاکھ جرمانہ عائد

پاکستان مسلم لیگ ن کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگیا ہے، راولپنڈی عدالت کے ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج صاحبزادہ نقیب شہزاد نے شوکت خانم میں کرپشن کے الزامات لگانے پر ن لیگ کے حنیف عباسی پر 50 لاکھ روپے جرمانہ عائد کر دیا،تاہم عدالت کا فیصلہ آج سننے کے لیے حنیف عباسی عدالت نہ آئے۔

عدالت نے مسلم لیگی رہنما حنیف عباسی کے شوکت خانم میں سنگین کرپشن کے الزامات جن کو وہ ثابت نہ کر سکے، کو مسترد کرتے ہوئے شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال کا ہتک عزت کا دعوی منظور کرتے ہوئے حنیف عباسی کو 50 لاکھ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم سنا دیا۔

حنیف عباسی کے الزامات پر شوکت خانم میموریل کینسر ہسپتال نے ان کے خلاف 10 ارب روپے ہرجانے کا مقدمہ دائر کیا تھا اور مقدمے میں موقف اپنایا تھا کہ حنیف عباسی کی جانب سے ہسپتال کی ساکھ کو خراب کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

واضح رہے کہ خواجہ آصف بھی شوکت خانم پر کرپشن کے الزامات لگاچکے ہیں اور ان پر بھی اربوں روپے ہرجانے کا کیس عدالت میں ہے جس کی سماعت گزشتہ 9 سال سے جاری ہے لیکن فیصلہ نہیں آسکا۔

  • Get those bastard corrupt mafia out of our society and clean our pak country. Inn logo ki shakel dekhi ganjey k chamchey badmaash lagtey hain. Harramio ny baap ka karabar samja hoa tha. Way to go !!


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >