لیگی عہدیدار عسکری قیادت اور افسران سے ملاقات نہیں کرسکتے، ہدایت نامہ جاری

 لیگی عہدیدار عسکری قیادت اور افسران سے ملاقات نہیں کرسکتے، ہدایت نامہ جاری

مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے حکم پر پارٹی رہنماؤں کی عسکری قیادت یا ایجنسیوں کے لوگوں سے ملاقات نہ کرنے سے متعلق مراسلہ جاری کردیا گیا ہے،جس میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف کی یہ خواہش ہے کہ جمہوری بحران میں نواز شریف کے بیانیے کی مکمل طور پر حمایت کی جائے۔

نواز شریف نے چند روز پہلے ایک ٹویٹ کے ذریعے اپنی پارٹی رہنماؤں کو عسکری قیادت سے ملاقاتوں سے روک دیا تھا، اب انہوں نے مسلم لیگ نے سیکرٹری جنرل احسن اقبال سے ایک مراسلہ جاری کروایا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ملکی مفاد میں کوئی بھی ملاقات پارٹی قائد کی اجازت کے بغیر نہیں ہوسکتی، اچھے مقصد کیلئے کی جانے والی ملاقاتوں کو بھی غلط معنی پہنائے جاتے ہیں۔

 لیگی عہدیدار عسکری قیادت اور افسران سے ملاقات نہیں کرسکتے، ہدایت نامہ جاری

مراسلے میں مسلم لیگ ن کے عہدیداروں کو مخاطب کرکے کہا گیا کہ پاکستان کی بقا کی جنگ لڑتے ہوئے ہمارا مقصد ملک میں آئین کی بالادستی ہے، نواز شریف کی تقریر پر کارکنان کی پزیرائی اطمینان بخش ہے، ملاقاتوں پر پابندی کا فیصلہ ہر قسم کی قیاس آرائیوں کو روکنے کیلئے کیا گیا ہے۔

مراسلے میں کہا گیا ہے کہ قومی سلامتی یا آئینی ذمہ داریوں سے متعلق امور پر اگر ملاقات انتہائی ضروری ہو تو اس کیلئے پارٹی قائد سے اجازت لی جائے گی۔

یاد رہے کہ اپوزیشن کی کل جماعتی کانفرنس کے بعد مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کی عسکری قیادت سے خفیہ ملاقاتوں کی تفصیلات میڈیا کی زینت بنیں جس کے بعد مسلم لیگ ن کے بیانیے کو شدید دھچکا پہنچا۔

خفیہ ملاقاتوں میں شہباز شریف، خواجہ آصف اور احسن اقبال کا نام آیا اس کے علاوہ مسلم لیگ ن کے رہنما محمد زبیر سے متعلق ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ انہوں نے 2 بار آرمی چیف سے ملاقات کی ملاقات میں نواز شریف اور مریم نواز سے متعلق بات چیت ہوئی، محمد زبیر نے ان ملاقاتوں کو نجی تعلقات قرار دیا مگر مسلم لیگ ن شدید دباؤ کا شکار ہوگئی جس کے بعد نواز شریف کی جانب سے پارٹی رہنماؤں کو ایسی ملاقاتوں سے روک دیا گیا تھا۔

  • عدالت عالیہ سے نا اہل قرار دیا جانے والا کوی شخص عوامی نمائندوں کو کیسے اس قسم کے احکامات دے سکتا ہے۔ امید ہے کہ ملک و قوم سے مخلص لیگی عوامی نمائندے اس بکواس نما ہدایات کو خاطر میں نہ لائیں گے اور اپنی اَزادانہ سوچ پر عمل کریں گے۔۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >